اسدی فوج البوکمال سے داعش کو نکالنے میں کامیاب،42فوجی 32جنگجوہلاک

اسدی فوج اور اس کی حامی قوتوں نے خون ریز لڑائی کے بعد البوکمال شہرپر دوبارہ اپنا کنٹرول قائم کرلیا ،مبصر تنظیم

منگل جون 14:12

بیروت (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جون2018ء) شام کی سرکاری فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ اس نے ملک کے مشرقی شہر البوکمال میں شدت پسند تنظیم داعش کو شدید لڑائی کے بعد بے دخل کردیا ہے جس کے بعد اب شہر پرمکمل طور پر سرکاری فوج کا کنٹرول ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق شام میں انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے ادارے شامی آبزرویٹری نے بتایاکہ تین روز تک البوکمال کے بعض علاقوں پر داعش کے جنگجوؤں نے قبضہ کرلیا تھا مگر شامی فوج اور اس کی حامی ملیشیاؤں نے گھمسان کی جنگ کے بعد داعش کو شہر سے بے دخل کردیا۔

آبزرویٹری کے مطابق داعش کے جنگجوؤں نے جمعہ کے روز شہر پر قبضے سے قبل 10 خود کش حملے کیے جس کے بعد شہر کے شمالی اور شمال مغربی علاقوں سے سرکاری فوج پسپا ہوگئی تھی۔انسانی حقوق کے مندوب رامی عبدالرحمان نے بتایا کہ اسدی فوج اور اس کی حامی قوتوں نے خون ریز لڑائی کے بعد البوکمال شہرپر دوبارہ اپنا کنٹرول قائم کرلیا ہے۔

(جاری ہے)

جب کہ داعش کے جنگجو شہر سے فرار ہوگئے ۔

جمعہ کے روز سے جاری لڑائی کے دوران اب تک 48 شامی فوجی اور 32 داعشی جنگجو جن میں 10 خود کش بم بار بھی شامل ہیں ہلاک ہوئے ہیں۔خیال رہے کہ جنوبی دمشق سے ایک معاہدے کے تحت داعش کے انخلاء کے بعد بعض دوسرے علاقوں میں داعش کے حملوں میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔۔عراق کی سرحد سے متصل البوکمال شہر میں سرکاری فوج کے ساتھ لڑائی کے دوران داعش کے جنگجو کرد اور عرب ملیشیا کے خلاف بھی متعدد محاذوں پر لڑائی میں مصروف رہے۔

متعلقہ عنوان :