سابق سیکرٹری لینڈ یوٹیلائزیشن مصطفی پھل کی ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست مسترد ،

نیب نے گرفتار کرلیا

منگل جون 16:16

سابق سیکرٹری لینڈ یوٹیلائزیشن مصطفی پھل کی ضمانت قبل از گرفتاری کی ..
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جون2018ء) سپریم کورٹ کراچی رجسٹری نے اراضی کی غیر قانونی الاٹمنٹ میں ملوث سابق سیکرٹری لینڈ یوٹیلائزیشن مصطفی پھل کی ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست مسترد کردی ہے ۔منگل کو سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں ملیرمیں سترایکڑ سے زائد اراضی کی غیر قانونی الاٹمنٹ کیس میں کمشنر بے نظیر آباد غلام مصطفی پھل کی ضمانت قبل از وقت گرفتاری سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئے عدالت نے سابق سیکریٹری لینڈ یوٹیلائزیشن مصطفی پھل کی ضمانت قبل از وقت گرفتاری کی درخواست مسترد کردی ۔

(جاری ہے)

درخواست ضمانت مسترد ہونے پرنیب نے غلام مصطفی پھل کو گرفتارکرلیا سابق سیکریٹری لینڈ یوٹیلائزیشن غلام مصطفی پھل کو تفتیش کے لیے نیب ہیڈ کوارٹر منتقل کیا گیا واضح رہے کہ سندھ ہائی کورٹ نے بھی غلام مصطفی پھل،ابوبکر داود اورعبدالعزیز دادو کی عبوری ضمانت منسوخ کی تھیں جبکہ ضمانت منسوخی کے بعد غلام مصطفی پھل نیب کو چکمہ دے کر فرار ہوگیا تھا نیب کی جانب سے ملزمان پر الزام تھا کہ ملزمان نے 2011 میں ملیر کی صنعتی اراضی کو رہائشی و کمرشل مقاصد میں تبدیل کیا اور قومی خزانے کو کرڑوں روپے کا نقصان پہنچایا