انسانی حقوق کی خلاف ورزی: قطر نے امارات کیخلاف عالمی عدالت میں کیس دائر کردیا

منگل جون 17:04

انسانی حقوق کی خلاف ورزی: قطر نے امارات کیخلاف عالمی عدالت میں کیس دائر ..
دوحہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جون2018ء) قطر نے انسانی حقوق کی خلاف ورزی اور امتیازی سلوک کے الزام پر اپنے خلیجی حریف متحدہ عرب امارات ( یو اے ای ) کیخلاف اقوام متحدہ کی اعلیٰ عدالت میں کیس دائر کردیا ہے۔منگل کو قطری وزارت خارجہ نے متحدہ عرب امارات کی جانب سے قطر اور قطری شہریوں کیخلاف امتیازی سلوک اور انسانی حقوق کی بڑھتی خلاف ورزیوں کی مذمت کی،ساتھ ہی انہوں نے سیاسی محاذ کے طور پر قطر کیخلاف غیر قانونی زمین،سمندر اور ہوا کے ذریعے محاصرہ کرنے پر اظہار مذمت کیا۔

قطری وزیر خارجہ خارجہ محمد بن عبدالرحمٰن التھانی کے بیان کو نقل کرتے ہوئے وزارت خارجہ کا کہنا تھا کہ’متحدہ عرب امارات کی جانب سے غیر قانونی اقدامات نے خاندانوں کو الگ کردیا ہے۔انہوں نے کہا کہ یو اے ای نے قطری کمپنیوں اور افراد کو جائیداد اور اثاثوں سے محروم کردیا ہے اور متحدہ عرب امارات کی عدالتوں میں تعلیم،، صحت اور انصاف کے بنیادی حقوق تک رسائی سے روک دیا ہے۔

(جاری ہے)

وزارت خارجہ کی جانب سے کہا گیا کہ ان سب اقدامات کیوجہ سے قطر کی جانب سے متحدہ عرب امارات کیخلاف عالمی عدالت انصاف ( آئی سی جے ) میں کارروائی کا آغاز کیا گیا۔۔قطر کی جانب سے عالمی عدالت انصاف میں درخواست کی گئی کہ’یو اے ای کو حکم دیا جائے کہ وہ عالمی ذمہ داریوں کیساتھ تمام ضروری اقدامات کرے اور امتیازی اقدمات کو کالعدم کرکے قطری شہریوں کے حقوق بحال کرے۔

دوحہ کی جانب سے عالمی کنونشن میں یہ حوالہ دیا گیا کہ قطر اور یو اے ای کی جانب سے تمام نسلی امتیاز کے خاتمے ( سی ای آر ڈی ) پر دستخط بھی کیے ہیں،لہٰذا قطر مطالبہ کرتا کہ متحدہ عرب امارات کی جانب سے سی ای آر ڈی کی خلاف ورزیوں پر معاوضہ دیا جائے۔واضح رہے کہ گزشتہ برس جون میں دہشتگردوں اور ایران کی حمایت کرنے کے الزام میں سعودی عرب،، یو اے ای، بحرین اور مصر نے قطر سے تعلقات منقطع کردیے تھے،تاہم دوحہ کی جانب سے ان دعووں کو مسترد کردیا تھا۔