الیکشن کمیشن نے فرائض سے غفلت برتنے پر چار اسسٹنٹ ریٹرننگ آفیسرز کو معطل کر دیا،انضباطی کارروائی کا حکم

منگل جون 17:34

الیکشن کمیشن نے فرائض سے غفلت برتنے پر چار اسسٹنٹ ریٹرننگ آفیسرز کو ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جون2018ء) الیکشن کمیشن آف پاکستان نے الیکشنز ایکٹ 2017 کی دفعہ 55 کا استعمال کرتے ہوئے فرائض سے غفلت برتنے پر ملک بھر سے چار اسسٹنٹ ریٹرننگ آفیسرز کو فوری طور پر معطل کر دیا ہے اوران کیخلاف انضباطی کارروائی کرنے کا حکم جاری کر دیا ہے۔ جن اسسٹنٹ ریٹرننگ آفیسرز کے خلاف کارروائی کی جارہی ہے ان میں راجہ عزیز رد ایگزیکٹیوانجینئر واپڈا خیر پور/اسسٹنٹ ریٹرننگ آفیسر برائے این اے 210 خیر پور(III) ،الطاف شیخ ایگزیکٹیو انجینئر بلڈنگ خیرپور/ اسسٹنٹ ریٹرننگ آفیسر برائے این اے 209 خیر پورشامل ہیں مندرجہ بالا دونوں افسران کے خلاف انکوائری کرنے کیلئے مظہر حسین ریجنل الیکشن کمشنر سکھر کو انکوائری آفیسر مقرر کیا گیا ہے۔

اسی طرح جن دیگر دو افسران کو معطل کیا گیا ہے ان میں ضیاالحق اسسٹنٹ پوسٹ ماسٹر جنرل سیالکوٹ / اسسٹنٹ ریٹرننگ آفیسر برائے پی پی 40 سیالکوٹ ہیں اور انکے خلاف انکوائری کیلئے چوہدری علیم شہاب ریجنل الیکشن کمشنر گوجرانوالہ کو انکوائری آفیسر مقرر کیا گیا ہے۔

(جاری ہے)

علاوہ ازیں ریٹرننگ آفیسر پی بی 26 کی شکایت پر عبدالرحمان ، سپرنٹنڈنٹ لوکل گورنمنٹ ڈیپارٹمنٹ کوئٹہ جن کو اسسٹنٹ ریٹرننگ آفیسر تعینات کیا گیا تھا فرائض میں کوتاہی پر معطل کر کے فیاض حسین مراد ریجنل الیکشن کمشنر کوئٹہ کو انکوائری آفیسرز مقرر کیا گیا ہے۔

الیکشن کمیشن نے تمام انکوائر ی آفیسروں کو ہدایت کی ہیں کہ 30 روز کے اندرانکی انکوائری مکمل کرکے الیکشن کمیشن کو بجھوائیں۔ واضع رہے کہ الیکشن ایکٹ 2017 کی دفعہ 55 کے تحت پہلی مرتبہ کارروائی کرتے ہوئے چار افسران کو معطل کر کے انصباطی کارروائی کی جار ہی ہے۔