اسلام آباد ٹریفک پولیس کا عید الفطر کے موقع پراسلام آباد میں اوورچارجنگ ،اوورلوڈنگ کرنیوالی پی ایس وی گاڑیوں کیخلاف کارروائی

سپیشل سکواڈ تشکیل،خصوصی ناکہ جات بھی لگا دیئے گئے

منگل جون 17:34

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جون2018ء) اسلام آباد ٹریفک پولیس کا عید الفطر کے موقع پراسلام آباد میں اوورچارجنگ اور اوورلوڈنگ کرنے والی پی ایس وی گاڑیوں کیخلاف کارروائی کا آغازکردیا گیا،سپیشل سکواڈ تشکیل،خصوصی ناکہ جات بھی لگا دیئے گئے ۔ ایس ایس پی ٹریفک فرخ رشیدنے کہا ہے کہ سپیشل سکواڈ اسلام آباد کے اڈوں اورچوکوں میں تعینات کئے گئے ہیں جو اضافی کرایہ وصول کرنے والی گاڑیوں کے خلاف کاروائی کر رہے ہیں،ایس پی ٹریفک چوہدری خالد رشید اوور چارجنگ اور اوورلوڈنگ کے خلاف کاروائی کرنے والے سپیشل سکواڈ کی نگرانی کر رہے ہیں،،،ٹریفک پولیس نے اسلام آباد کی اہم مارکیٹوں ،شاپنگ پلازوں اور بازاروں میں مزید اضافی نفری تعینات کر دی ہے۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ٹریفک پولیس نے عید الفطر کے موقع پر اسلام آبادمیں زائد کرایہ وصول کرنے اور اوور لوڈنگ کرنے والی پی ایس وی گاڑیوں کے خلاف کاروائی مزید سخت کرنے کا فیصلہ کیا ہے اس سلسلے میں اسلام آباد ٹریفک پولیس کے سپیشل سکواڈ بسوں اور ویگنوں کے اڈوں پر تعینات کئے گئے ہیں اور خصوصی ناکہ جات بھی لگائے گئے ہیں، ان سپیشل سکواڈ کی نگرانی ایس پی ٹریفک چوہدری خالد رشید کر ہے ہیںآ ئی ٹی پی کے سپیشل سکواڈاسلام آباد کی مختلف اہم مارکیٹوں اور شاپنگ پلازوں میں بھی تعینات ہیں جو ڈبل پاکنگ اور غلط پارکنگ والی گاڑیوں کے خلاف کاروائی کر رہے ہیں اسلام آباد ٹریفک پولیس کی اضافی نفری اہم مارکیٹوں اور شاپنگ پلازوں پر تعینات کی گئی ہے جو ون ویلنگ کرنے والوں موٹر سائیکل سواروں ،غلط پارکنگ اور ڈبل پارکنگ کرنے والوں کے خلاف کاروائی کر رہی ہے،ایس ایس پی ٹریفک فرخ رشید نے کہا ہے کہ چاند رات اور عید الفطر کی چھٹیوں کے دوران آئی ٹی پی کے سپیشل سکواڈ اسلام آباد کی مختلف شاہراہوں اور چوکوں میں تعینات رہیں گے،جو ون ویلنگ کرنے والے موٹر سائیکل سواروں کے خلاف سخت قانونی کاروائی کریں گے،انھوں نے مزید کہا ون ویلنگ، غلط اور ڈبل پارکنگ کے خلاف کارائی کا مقصد ٹریفک کو رواں دواں رکھنا ،شہریوں کے جان ومال کے تحفظ کو یقینی بنانا،شہریوں کے لئے محفوظ سفر کو یقینی بنانا اور شاپنگ کے لئے آنے والے شہریوں کے لئے آسانی پیدا کرنا ہے۔

متعلقہ عنوان :