وزیراعظم کی زیر صدارت اجلاس، وزارت صحت خدمات، ریگولیشنز اینڈ کوآرڈینیشن کی کارکردگی باری بریفنگ دی گئی

معیاری صحت خدمات کی فراہمی ،صحت سے متعلق بہتر نتائج کے حصول کیلئے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے درمیان رابطہ کاری کی ضرورت ہے ، جسٹس (ر) ناصر الملک

منگل جون 19:46

وزیراعظم کی زیر صدارت اجلاس، وزارت صحت خدمات، ریگولیشنز اینڈ کوآرڈینیشن ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جون2018ء) نگران وزیراعظم جسٹس (ر) ناصر الملک نے وزارت صحت کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ صحت کی معیاری خدمات کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے درمیان رابطہ کاری کی ضرورت ہے۔۔وزیراعظم نے یہ بات منگل کو وزارت قومی صحت، خدمات، ریگولیشنز اینڈ کوآرڈینیشن کی کارکردگی بارے دی جانیوالی بریفنگ کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔

اس موقع پر وزیر برائے قومی صحت خدمات محمد یوسف شیخ، وزیراعظم کے سیکرٹری، سیکرٹری وزارت صحت اور سینئر حکام بھی موجود تھے۔ سیکرٹری قومی صحت خدمات نے وزیراعظم کو بالخصوص 18ویں ترمیم کے بعد ادویات، طبی تعلیم،، بیماریوں کے جائزہ، فریقین سے مشاورت، صحت سے متعلق مسائل کے بارے میں تحقیق اور ملک کی عالمی ذمہ داریوں جیسے شعبوں میں وزارت کے امور کار کے بارے میں آگاہ کیا۔

(جاری ہے)

انہوں نے وزارت کے ملحقہ محکموں کے کردار اور ریگولیٹری اور کوآرڈینیشن امور، پالیسی سازی کی تشکیل کے عمل اور قومی سطح پر تحقیقی کام کو اجاگر کیا۔ سیکرٹری صحت نے وزیراعظم کو ملک بھر میں صحت سے متعلقہ پروگراموں کی پیشرفت کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔ وزیراعظم جسٹس(ر) ناصر الملک نے وزارت کی کارکردگی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ معیاری صحت خدمات کی فراہمی اور صحت سے متعلق بہتر نتائج کے حصول کیلئے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے درمیان رابطہ کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ عوام کو فراہم کی جانے والی صحت کی خدمات کے دائرہ کار اور معیار کو بڑھانے کیلئے کوششیں بروئے کار لائی جانی چاہئیں۔