خیبر پختونخوا پولیس کی گاڑیوں ، سرکاری مقامات پر آگ بجھانے والے زائد المعیاد آلات سیکورٹی رسک بن گئے

منگل جون 21:10

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جون2018ء) خیبر پختونخوا پولیس کی گاڑیوں ، سرکاری مقامات پر آگ بجھانے والے زائد المعیاد آلات سیکورٹی رسک بن گئے ہیں گوجوانوالہ میں سکول کی گاڑی میں آگ لگنے اورطلبہ و طالبات کے جھلسنے کے بعد خیبرپختونخوا پولیس کی گاڑیوں میں ، مسافر گاڑیوں میں آگ بجھانے کے آلات کی ہدایات کی تھی جبکہ سول سیکرٹریٹ ، محکمہ تعلیم ، فاٹا سیکرٹریٹ ، صحت سمیت دیگر دفاتر میں بھی آگ بجھانے والے آلات لگانے کی ہدایات کی ہے ۔

(جاری ہے)

تاہم مسافر گاڑیوں سے یہ آلات اتار دیئے گئے ہیں ۔ خیبرپختونخوا پولیس کی گاڑیوں میں لگائے جانے والے آلات بھی ایکسپائر ہو گئے ہیں ۔ محکمہ صحت کے سیکرٹریٹ میں آتشزدگی کے واقعہ کے بعد اہم دستاویزات کے ضائع ہونے کے بعد ہائی رسک عمارتوں پر لگے ہو ئے آلات بھی ناکارہ ہو چکے ہیں ان آلات کے معیاد رواں سال کے تیس جنوری کو ختم ہو چکی ہے ۔ اور چارماہ گزر گئے ہیں لیکن زائد المعیاد آگ بجھانے والے آلات کو تبدیل نہیں کیا گیا جوکسی بھی بڑے حادثے کا پیش خیمہ ہو سکتا ہے ۔