میں مہاجروں کے راستے سے کانٹے نکالنا چاہتا ہوں ، چیئرمین پی ایس پی مصطفی کمال

مردم شماری میں دھاندلی ہوئی جس کے بعد صوبائی حکومت نے حلقہ بندیوں میں دھاندلی کی

منگل جون 21:28

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جون2018ء) پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفی کمال نے کہاکہ پی ایس پی کراچی سے کلین سوئپ کرے گی اور بلوچستان میں بھی سرپرائز دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے جیسے پہلے کراچی شہر کو بنایا تھا ایک بار پھر بنائیں گے اور وہاں چند نشستوں پر پیپلز پارٹی سے ہمارا مقابلہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا مقابلہ دو پیسوں والی جماعتوں سے ہے، پیسے سے شہریوں کو پانی دینا تھا اور کچرا اٹھانا تھا اس سے الیکشن مہم چلائی جا رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حلقہ بندیوں پر اعتراض اٹھاتے ہوئے مصطفی کمال نے کہا کہ پہلے مردم شماری میں دھاندلی ہوئی جس کے بعد صوبائی حکومت نے حلقہ بندیوں میں دھاندلی کی۔انہوں نے کہا کہ کراچی میں ملیر کے ایک علاقے میں قومی اسمبلی کا ایک حلقہ 2 لاکھ 35 ہزار ووٹوں پر بنایا گیا اور ساتھ میں 4 لاکھ 10 ہزار ووٹوں سے ایک حلقہ بنایا گیا، جو انتخابات سے قبل دھاندلی ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا شہر میں جو بڑے بڑے جھنڈے لگے ہوئے ہیں اور جو لگ رہے ہیں وہ تمارے شہر کے ڈیولپمنٹ کے فنڈ میں سے چوری کر کے لگ رہے ہیں۔ سندہ حکومت بھی یہ ہی کر رہی ہے اور شہری حکومت بھی جو فنڈ ہمیں صاف پانی فراہم کرنے کیلئے استعمال ہونا تھے تمہارے شہر کا کچرا اٹھنا تھا وہ پیسے الیکشن مہم میں استعمال ہورہے ہیں تاکہ اگلے پانچ سال پھر کمائے اور کھائیں انہوں نے کہا میں مہاجروں کے راستے سے کانٹے نکالنا چاہتا ہوں میں ان کے مزید دشمن بنا نا نہیں چاہتا ہوں اور صرف مہاجر ہی نہیں تمام اس شہر میں رہنے والی قومیتوں کے علاقے سے کانٹے نکالنا چاہتا ہوں میں اگر اپنے مانگتا ہوں تو اس شہر میں رہنے والوں تمام لوگوں کیلئے مانگتا ہوں میں اگر کہتا ہوں کہ اس شہر سے کچرا اٹھنا چاہئے تو میں اس شہر میں رہنے والے تمام لوگوں کیلئے یہ مطالبہ کرتا ہوں اور یہ ہی ہماری جدوجہد اور پاک سر زمین پارٹی کا منشور ہے