پنجاب اور سندھ کی 90فیصد قومی و صوبائی نشستوں کو حتمی شکل دے دی گئی ،

پنجاب کی چند نشستوں کے متعلق صوبائی پارلیمانی بورڈ آج کے اجلاس میں سفارشات پیش کرے گا ، سندھ کی قومی و صوبائی نشستوں کے حوالے سے صوبائی پارلیمانی بورڈز کی سفارشات پر سو فیصد اتفاق کر لیا گیا ہے، کل کے اجلاس میں صوبہ بلوچستان اور خیبرپختونخوا کے پارلیمانی بورڈز کی سفارشات کا جائزہ لے کر حتمی جائزہ کے بعد ٹکٹ جاری کر دیے جائیں گے متحدہ مجلس عمل کے سیکرٹری جنرل کا مرکزی پارلیمانی بورڈ کے اجلاس سے خطاب

بدھ جون 00:00

پنجاب اور سندھ کی 90فیصد قومی و صوبائی نشستوں کو حتمی شکل دے دی گئی ،
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 جون2018ء) متحدہ مجلس عمل پاکستان کے مرکزی پارلیمانی بورڈ کا اجلاس سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی و متحدہ مجلس عمل لیاقت بلوچ کی صدارت میں اسلام آباد میں ہوا جس میں مرکزی پارلیمانی بورڈ کے ارکان اکرم خان درانی،، حافظ عبدالکریم، علامہ عارف واحدی، پروفیسر محمد ابراہیم، محمد خان لغاری، سکندر گیلانی ایڈووکیٹ اور محمد اسلم غوری نے شرکت کی۔

مجلس عمل پنجاب کے صدر میاں مقصود احمد، ڈاکٹر جاوید اختر اور ریاض شاہ نے مرکزی پارلیمانی بورڈ کے سامنے اپنی سفارشات پیش کیں جب کہ سندھ سے ڈاکٹر شاہد سومرو اور ڈاکٹر معراج الہدی صدیقی نے اپنی سفارشات پیش کیں۔۔لیاقت بلوچ نے کہا کہ پنجاب اور سندھ کی 90فیصد قومی و صوبائی نشستوں کو حتمی شکل دے دی گئی ہے، پنجاب کی چند نشستوں کے متعلق صوبائی پارلیمانی بورڈ کل کے اجلاس میں سفارشات پیش کرے گا جب کہ سندھ کی قومی و صوبائی نشستوں کے حوالے سے صوبائی پارلیمانی بورڈز کی سفارشات پر سو فیصد اتفاق کر لیا گیا ہے۔

(جاری ہے)

کل کے اجلاس میں صوبہ بلوچستان اور خیبرپختونخواہ کے پارلیمانی بورڈز کی سفارشات کا جائزہ لیا جائے گا۔ اور حتمی جائزہ کے بعد ٹکٹ جاری کر دیے جائیں گے۔مرکزی پارلیمانی بورڈ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے لیاقت بلوچ نے کہا کہ مجلس عمل پوری فعالیت، مکمل نظم و ضبط اور بھرپور تیاری کے ساتھ انتخابی میدان میں اتری ہے۔ ایم ایم اے نے انتخابی شیڈول سے قبل ہی اپنی مرکزی صوبائی اور ضلعی تنظیمیں مکمل کر لی تھیں جنھوں نے الیکشن کے متعلقہ مقامی سطح پر اپنا ہوم ورک مکمل کر کے صوبوں کو سفارشات پیش کر دی تھیں۔

اب صوبائی پارلیمانی بورڈز کی سفارشات پر مرکزی پارلیمانی بورڈ نے ٹکٹوں کی تقسیم کا مرحلہ خوش اسلوبی سے مکمل کر لیا ہے اس پورے عمل سے واضح ہو گیا ہے ایم ایم اے انتخابی عمل کے لیے کتنی سنجیدگی سے اپنا کردار ادا کر رہی ہے۔۔لیاقت بلوچ نے کہا کہ متحدہ مجلس عمل عوام کے دلوں کی دھڑکن بن چکی ہے اور آنے والے الیکشن میں سیکولر اور بدتہذیب قوتوں کو بدترین شکست دے گی۔ انھوں نے کہا کہ سیاسی وفاداریاں تبدیل کرنے والوں نے سیاست کو بدنام کر دیا ہے۔ اب عوام کے دلوںمیں ان کے لیے کوئی ہمدردی نہیں، اس لوٹا کریسی کی سیاست کو ہمیشہ کے لیے دفن کرنے کے لیے سنجیدہ اور محب وطن قوتوں کو آگے بڑھ کر ایم ایم اے کا ساتھ دینا چاہیے۔