مراکش نے غزہ میں ملٹری فیلڈ ہسپتال قائم کردیا،

ابتدائی طبی امداد کی تمام سولیات فراہم کی جائینگی

بدھ جون 15:40

غزہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 جون2018ء) مراکش کی جانب سے فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں ملٹری فیلڈ ہسپتال قائم کر دیا گیا ہے۔ ہسپتال کا کنٹرول مراکشی حکام کے پاس ہوگا تاہم اس میں مقامی فلسطینی انتظامیہ کی معاونت بھی حاصل ہوگی۔۔مصر میں مراکش کے سفیر احمد التازی نے غزہ کی پٹی کے جنوبی شہر خان یونس میں فیلڈ ہسپتال کا افتتاح کیا۔ اس ہسپتال کے قیام کا مقصد غزہ کی پٹی میں اسرائیلی فوج کی کارروائیوں سے زخمی ہونیوالے فلسطینیوں کو فوری طبی امداد مہیا کرنا ہے۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے مراکشی سفیر نے کہا کہ غزہ کی پٹی میں چند روزہ قیام کے دوران انہیں بے پناہ عزت واحترام دیا گیا۔فیلڈ ہسپتال کے نگران کرنل احمد ابو نعیم نے ایک بیان میں کہا کہ فیلڈ اسپتال میں ابتدائی طبی امداد کی تمام سہولیات مہیا کی جائیں گی۔

(جاری ہے)

ان کا کہنا تھا کہ ہسپتال میں 13 ڈاکٹر اور 21 نرسیں خدمات انجام دیں گی جب کہ 60 بیڈ قائم کیے گئے ہیں۔

مجموعی طورپر فیلڈ اسپتال میں 124 افراد کام کریں گے۔درایں اثناء فلسطینی سیکرٹری خارجہ غازی غمد نے ایک بیان میں مراکش کی جانب سے غزہ میں فیلڈہسپتال کے قیام پر رباط کا شکریہ ادا کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں فخر ہے کہ مراکش کی حکومت اور فرمانروا شاہ محمد ششم نے بروقت غزہ کی پٹی کے عوام کی داد رسی کیلئے فیلڈ ہسپتال قائم کرنے کا فیصلہ کیا اور انتہائی کم وقت میں اس فیصلے کو عملی شکل دے دی۔