خواجہ سراؤں نے الیکشن کمیشن فیس ختم کرنے کا مطالبہ کردیا

الیکشن لڑنےکیلئے30 ہزارروپےفیس نہیں دےسکتے،خواجہ سراوں کومختلف پارٹیوں کی جانب سےدھمکیاں بھی مل رہی ہیں۔پی ٹی آئی گلالئی کے ٹکٹ ہولڈرخواجہ سراء نایاب کی پریس کانفرنس

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ بدھ جون 15:59

خواجہ سراؤں نے الیکشن کمیشن فیس ختم کرنے کا مطالبہ کردیا
پشاور(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔13 جون 2018ء) : پاکستان تحریک انصاف گلالئی کے ٹکٹ ہولڈرز خواجہ سراؤں نے الیکشن کمیشن سے فیس ختم کرنے کا مطالبہ کردیا ہے۔ خواجہ سراء نایاب نے کہا کہ الیکشن لڑنے کیلئے30 ہزارروپے فیس نہیں دے سکتے،خواجہ سراوں کو مختلف پارٹیوں کی جانب سے دھمکیاں بھی مل رہی ہیں۔ تحریک انصاف گلالئی کے ٹکٹ پرالیکشن لڑنے والے خواجہ سرا نایاب علی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ این اے 142 اوکاڑہ سے قومی اسمبلی کا الیکشن لڑرہا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ الیکشن لڑنے کے لیے30 ہزارروپے کی فیس نہیں دے سکتے۔ انہوں نے الیکشن کمیشن سے مطالبہ کیا ہے کہ خواجہ سراؤں پرفیس نہ لی جائے۔ خواجہ سرا نایاب نے کہا کہ خواجہ سراوں کو مختلف پارٹیوں کی جانب سے دھمکیاں مل رہی ہیں۔

(جاری ہے)

مشکلات کے باوجود بھر پورانتخابی مہم چلائیں گے۔ واضح رہے تحریک انصاف گلالئی چار اتخابی حلقوں میں خواجہ سراؤں کو میدان میں اتارے گی۔

ان حلقوں میں خواجہ سراء لبنی لال حلقہ پی پی 26 جہلم اور میڈم رانی حلقہ پی کے 40، نایاب علی حلقہ این اے 142، ندیم کشش حلقہ این اے 52 اسلام آباد سےالیکشن لڑوانے کا اعلان کیا تھا۔ عائشہ گلالئی نے کہا تھا کہ امریکا اور کینیڈا میں سب لوگ برابر ہوتے ہیں،ہمارے ہاں اقلیتیوں اور خواجہ سراؤں کی عزت نہیں۔ کینیڈا اور ناروے کا سفیر بھی تیسری جنس سے ہے۔

انہوں کا کہنا تھا کہ یورپ میں خواجہ سراؤں کو عزت دی جاتی ہے وہاں ساری انسانیت برابر ہے۔ انہوں نے کہا کہ سابق وفاقی وزیر طارق فضل چوہدری کا اسلام آباد میں ندیم کشش مقابلہ کریں گی،جہلم میں لبنیٰ لال انتخابات میں حصہ لیں گی۔اسی طرح میڈم رانی ہری پور سےالیکشن لڑیں گی۔اسی طرح عائشہ گلالئی نےقومی اسمبلی کی6حلقوں سے انتخاب لڑنے کا اعلان کیا ہوا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق عائشہ گلالئی نے بتایا کہ وہ عمران خان کے خلاف راولپنڈی سے بھی انتخاب لڑیں گی۔ کراچی اور سجاول سے بھی قومی اسمبلی کا انتخاب لڑیں گی۔