لاہور، اسلام آباد ائیرپورٹ کی تعمیر میں نقائص کے معاملے کی تحقیقات کیلئے کمیٹی تشکیل

پی آئی اے ، سول ایوی ایشن افسران پر مشتمل کمیٹی دو ہفتے میں رپورٹ پیش کرے،سپریم کورٹ کی ہدایت

بدھ جون 20:40

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 جون2018ء) سپریم کورٹ نے اسلام آباد ائیرپورٹ کی تعمیر میں نقائص کے معاملے کی تحقیقات کے لیے کمیٹی تشکیل دے دی ہے اور ہدایت کی کہ پی آئی اے اور سول ایوی ایشن افسران پر مشتمل کمیٹی دو ہفتے میں رپورٹ پیش کرے۔ چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے اسلام آباد کے نئے ایئر پورٹ کے نقائص پر از خود نوٹس کی سماعت کی۔

پی آئی اے کے سی ای او اور ڈی جی سول ایشن سمیت اعلی افسران پیش ہوئے۔

(جاری ہے)

چیف جسٹس پاکستان نے حیرانگی کا اظہار کیا کہ کیسی تعمیر کی گئی کہ وہاں پانی بھر گیا۔ چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ ایئر ہورٹ کو کس نے تعمیر کیا جس پر بتایا گیا کہ ایئر پورٹ کی تعمیر سول ایوی ایشن نے کرائی۔ چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیئے کہ سنا ہے چوہدری منیر نے اس کی تعمیر کر ائی اگر نہیں کرائی تو نام بار بار کیوں آ رہا ہے۔ چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں فل بنچ نے تعمیر کے بارے میں رپورٹ پر عدم اطمینان کا اظہار کیا اور ہدایت کی کہ معاملے کی تین سو صفحات کی نہیں بلکہ مختصر اور جامع رپورٹ پیش کی جائے۔