عام انتخابات میں حصہ لینے والے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی فارم کی جانچ پڑتال کا عمل جاری

آفاق احمد ،امین الحق، شاہی سید، سعید غنی، شازیہ مری، نصرت سحر عباسی، اشفاق منگی سمیت بیشتر امیدواروں کے کاغذات منظور کرلئے گئے

بدھ جون 21:30

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 جون2018ء) عام انتخابات میں حصہ لینے والے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی فارم کی جانچ پڑتال کا عمل جاری ہے۔ بدھ کو مہاجر قومی موومنٹ کے چیئرمین آفاق احمد،،ایم کیو ایم کے امین الحق ،،اے این پی کے شاہی سید، پیپلزپارٹی کے سعید غنی،شازیہ مری،، جی ڈی اے کی نصرت سحرعباسی،پی ایس پی کے اشفاق منگی سمیت بیشترامیدواروں کے کاغذات منظور کرلیے گئے۔

بلاول بھٹو کے فارم کی اسکروٹنی18 جون کو ہوگی ڈاکٹرعارف علوی کے کاغذات نامزدگی پرفیصلہ محفوظ کرلیا گیا۔۔کراچی سے قومی اسمبلی کے حلقہ 254سے مہاجرقومی موومنٹ کے چیئرمین آفاق احمد کے کاغذات درست قراردیے گئے۔ اس موقع پر آفاق احمد نے کہا کہ صوبے بھر سے مہاجر قومی موومنٹ کے امیدوار انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں اور جنوبی سندھ صوبے کے لئے لاکھوں لوگوں نے قربانیاں دیں ہیں،ریٹرننگ افسر نے چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹوکو18جون کوجانچ پڑتال کیلئے طلب کرلیاہے اس سے پہلے بلاول بھٹو کو 14 جون کواسکروٹنی کیلئے بلایاگیاتھا ادھر این اے 239سے پی ایس پی کے اشفاق منگی ،این اے 256 سے مسلم لیگ نون کے دوست محمد فیضی، پی ایس 106 سے اے این پی کیسمیع اللہ خٹک جبکہ این اے 239 سے مسلم لیگ نون کے رانا احسان ،،ایم کیوایم کیزاہد منصوری کے تین حلقوں این اے 240 ،پی ایس106 اورپی ایس 92سے،این اے 242 سے ایم کیو ایم کی رہنما کشور زہرہ ،پیپلزپارٹی کی رہنما شازیہ مری کے قومی اسمبلی میں خواتین کی مخصوص نشست سے ، حلقہ پی ایس 123 سے پیپلزپارٹی کیفیصل شیخ،این اے 251 سے ایم کیو ایم کے امین الحق ، حلقہ 245سے پی ایس پی کے امید وار سید فیضان،،حلقہ 239این اے سے ایم کیو ایم کے سہیل منصور ،این اے 243 کے امیدوار جسٹس ان ڈیموکریٹک پارٹی کے ایڈوکیٹ عبدالوہاب،این ای242سے متحدہ مجلس عمل کے یونس بارائی،NA-243 سے پاک سرزمین پارٹی کے مزمل قریشی ، حلقہ 106 سے اے این پی کے سمیع اللہ خٹک،این اے 238 اوراین اے 250 سے عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر شاہی سید ،این اے 237 کے لیے عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار عزیز محمد خان، پی ایس پی حسان صابر کے حلقہ این اے 242 ،این اے 244 سے شہزاد میمن ، سعید غنی اور پی ایس 104 سے پیپلزپارٹی کے سعید غنی،خواتین کی مخصوص نشست پرپیپلزپارٹی کی شازیہ مری،،جی ڈی اے کی نصرت سحرعباسی ،مسلم لیگ نون کی128سے امیدوار محسن ڈار،شہرت یافتہ پاکستانی سپرماڈل عباس جعفری کے پی ایس 125 سے ،پی ایس 130 سے پی ایس پی کے صوفیہ سعید این اے 242 سے پی ایس پی کے حسان صابر ،پی ایس 99 سے سندھ نیشنل پارٹی کے رمضان بلیدی،پی ایس 93 سے پی ایس پی کی آسیہ اسحاق، پی ایس 105 سیمسلم لیگ نون کے طارق محمود ،این اے 253 سیمسلم لیگ نون کے مولانا تنویر الق تھانوی ، این اے 240 سے، ایم کیو ایم کیاقبال محمد علی ،،حلقہ پی ایس 110 سے پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار خرم شیرزمان کے کاغذات نامزدگی،این اے 255 سے پی ایس پی کے ڈاکٹر جمیل راٹھور، این اے 248 سے پی ایس پی کی فوزیہ حمید،این ای250سیمسلم لیگ ق کے سہیل بیگ نوری ، ایم کیو ایم پاکستان کے امیدوار دیوان چاولہ کے مخصوص نشست پر کاغذات نامزدگی منظور کرلیے گئے علاوہ ازیں این ای239سیپی ایس پی کے رانا طارق کے کاغذات نامزدگی بیان حلفی تاخیرسے جمع کرانے پر مسترد کردیے گئے جبکہ تحریک انصاف سندھ کے صدر ڈاکٹرعارف علوی کے کاغذٓت نامزدگی پراعتراضات کی سماعت کے بعد فیصلہ انیس جون تک ملتوی کردیا گیا ہے۔

(جاری ہے)

دوسری جانب صوبائی الیکشن کمشنر سندھ محمد یوسف خان خٹک کا کہنا ہے کہ بدھ کوقومی اسمبلی کے لیے خواتین کی مخصوص نشستوں پر 20 کاغذات نامزدگی جبکہ صوبائی اسمبلی کے لیے خواتین کی مخصوص نشستوں پر 44 نامزدگی فارم اوراقلیتوں کی مخصوص نشستوں پربھی 22 نامزدگی فارم درست قرارپائے ہیں ۔