عمرہ ادائیگی سے واپسی پر عمران خان کی گاڑی کو بنی گالا کے باہر روک لیا گیا

بونیر سے تعلق رکھنے والے پی ٹی آئی کارکنان کا احتجاج، "نظریاتی کارکنان کو ٹکٹ دو" کے نعرے

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان جمعرات جون 12:14

عمرہ ادائیگی سے واپسی پر عمران خان کی گاڑی کو بنی گالا کے باہر روک لیا ..
اسلام آباد (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔14 جون 2018ء) عمرہ ادائیگی سے واپسی پر عمران خان کی گاڑی کو بنی گالا کے باہر روک لیا گیا۔ بونیر سے تعلق رکھنے والے پی ٹی آئی کارکنان نے سخت احتجاج کیااور "نظریاتی کارکنان کو ٹکٹ دو" کے نعرے لگائے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے چئیرمین عمران خان اپنی اہلیہ کے ہمراہ سعودی عرب عمرہ ادائیگی کے لیے گئے تھے تا ہم عمران خان جیسے ہی سعودی عرب سے پاکستان واپس پہنچے اور اپنی رہائش گاہ بنی گالا پہنچے تو انہیں عجیب صورتحال کا سامنا کرنا پڑا۔

بونیر سے آئے پی ٹی آئی کے کارکنان بنی گالا کے باہر احتجاج کر رہے تھے۔کارکنان نے بنی گالا کے باہر عمران خان کی گاڑی کو روک لیا۔اور ’ووٹ کو عزت دو‘ اور نظریاتی کارکنان کو عزت دو‘ کے نعرے لگائے گئے۔

(جاری ہے)

مظاہرین نے اعلان کیا کہ جب تک ٹکٹ جاری نہ ہوا تب تک بنی گالا کے باہر دھرنہ جاری رہے گا۔۔عمران خان مظاہرین کو یقین دہانی کروانے کے بعد ہی گھر میں داخل ہو سکے۔

یاد رہے کہ پی ٹی آئی اس بار ٹکٹوں کی تقسیم میں اپنے نظریاتی کارکنان سے زیادہ منتخب امیدواروں کو اہمیت دے رہی ہے۔جس کی وجہ سے تحریک انصاف کو شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ تحریک انصاف کی طرف سے ملک کے طول و عرض سے پاکستان تحریک انصاف کے انتخابی امیدواروں اور ٹکٹ ہولڈرز کے ناموں کا اعلان کیا گیا تھا۔ اس مرحلے پر بڑے بڑے سیاسی لیڈروں کے سیاسی جانشینوں اور بیٹوں کو بھی نوازا گیا۔

صرف یہ ہی نہیں بلکہ بہت سے نئے آنیوالوں کو بھی نظریاتی کارکنان پر ترجیح دی گئی۔اس طرح سے پاکستان تحریک انصاف کی ٹکٹوں کی تقسیم نے نیا تنازعہ کھڑا کر دیا۔۔تحریک انصاف کے لیے ہزاروں ووٹ لینے والے امیدواروں کو بھی نظر انداز کیا گیا۔اس تمام صورتحال کے پیش نظر تحریک انصاف کے کارکنان نے عمران خان کے گھر کے باہر احتجاجی مظاہرے بھی کیے۔