’’سر نہیں ڈھانپ سکتی‘‘ بھارتی کھلاڑی ایران سے باہر

اگلے ماہ شروع ہونے والے ’ایشین نیشنز چیس کپ‘ کا ڈریس کوڈ بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے ،ْ سومیا سوامی ناتھ

جمعرات جون 13:30

تہران (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 جون2018ء) شطرنج کی بھارتی کھلاڑی سومیا سوامی ناتھ نے ایران میں ایک مقابلے میں شرکت سے اس لیے انکار کر دیا ہے کیوں کہ اسے سر ڈھانپنے کی شرط منظور نہیں ہے۔سومیا سوامی ناتھ جو کہ عالمی سطح پر سابقہ جونئیر چمپئن بھی ہیں ان کا کہنا ہے کہ اگلے ماہ شروع ہونے والے ’ایشین نیشنز چیس کپ‘ کا ڈریس کوڈ ان کے بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔

(جاری ہے)

29 سالہ سوامی ناتھ کا کہنا ہے کہ ’’ اپنے سر کو ڈھاپنے کا ایرانی قانون میرے بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے کے علاوہ آزادی اظہار، اپنے خیالات اور اپنے مذہبی آزادی کے خلاف ہے۔‘‘سوامی ناتھ کا کہنا ہے کہ ’’ میں یہ بات سمجھتی ہوں کہ کھیل کے دوران ہمیں اپنے ممالک کا یونیفارم پہننا ہوتا ہے تاہم کھیل میں زبردستی کے ڈریس کوڈ کا کوئی جواز نہیں ہے۔‘‘یاد رہے کہ 1979ء کے اسلامی انقلاب کے بعد سے وہاں خواتین پر اپنا سر ڈھانپنے کا قانون نافذ ہے۔

متعلقہ عنوان :