داعش کی ایک بار پھر فٹبال ورلڈ کپ پر حملوں کی دھمکی

انتہائی خطرناک پوسٹرزجاری،سٹیڈیم کوآگ کے شعلوں میں گھرا ہوا دکھایا گیا

جمعہ جون 11:22

داعش کی ایک بار پھر فٹبال ورلڈ کپ پر حملوں کی دھمکی
ماسکو(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔15جون 2018 ء) داعش نے روس میں جاری فٹبال ورلڈ کپ پر حملوں کی تازہ ترین دھمکی دے دی ہے ۔تفصیلات کے مطابق فیفا ورلڈ کپ کا جمعرات کو روس اور سعودی عرب کے درمیان میچ سے آغاز ہوچکا ہے، ایونٹ کے حوالے سے پہلے سے ہی کئی خدشات ظاہر کیے گئے تھے جس کی وجہ سے سکیورٹی کے انتہائی سخت اقدامات کیے گئے ہیں اور اب داعش نے میگا ایونٹ پر حملوں کی تازہ ترین دھمکی دینے کے ساتھ ساتھ اس حوالے سے چند پوسٹرز بھی جاری کیے گئے ہیں، ان میں سے ایک تصویر میں سوچی کے ایک سٹیڈیم کو شعلوں میں گھرا ہوا دکھایا گیا ہے ۔

ایک جگہ پر فرنچ زبان میں لکھا گیا کہ ” ان سب کو قتل کردیں گے“ ساتھ میں ٹورنامنٹ کے ایک لوگو کو چھری سے2 ٹکڑے کرتے ہوئے دکھایا گیا، پس منظر میں ایک اور روسی سٹیڈیم موجود ہے۔

(جاری ہے)

تیسری تصویر میں ایک مسلح شخص کو دکھایا گیا جس کا کیپشن تھا کہ ’ دہشت کا آغاز ہوا چاہتا ہے‘۔ چوتھے میں 2013ءکی بوسٹن میراتھن میں ہونے والے بم دھماکے کا کلپ شامل ہے۔

یاد رہے کہ مئی میں بھی اسی تنظیم کی جانب سے ایک خوفناک پوسٹر جاری کیا گیا تھا جس میں نامور فٹ بالرز لیونل میسی اور کرسٹیانو رونالڈو کے سر تن سے جدا کرتے ہوئے دکھایا گیا، اس میں دونوں سٹارز گھٹنوں کے بل نیچے بیٹھے ہوئے جبکہ ان کے سروں پر 2افراد تلواریں لیے موجود تھے۔ اس کے ساتھ کیپشن تھا کہ ہم سٹیڈیم کو تمھارے خون سے بھر دیں گے۔ ایک جگہ پر تنظیم کی جانب سے یہ بھی پیغام دیا گیا کہ ’فیفا ورلڈ کپ 2018 ءجس میں کامیابی ہماری ہوگی‘۔یاد رہے کہ دنیا بھر سے بڑی تعداد میں شائقین روس آرہے ہیں اور میزبان ملک کی جانب سےبھی ایونٹ کے پرامن انعقاد کے لیے سخت سکیورٹی انتظامات کیے گئے ہیں۔