مقبوضہ کشمیر ، معروف صحافی شجاعت بخاری نا معلوم افراد کی فائرنگ سے قتل

امن مخالف قوتوں ے خلاف ہمیں متحد ہو جانا چاہیے،محبوبہ مفتی

جمعہ جون 14:39

سری نگر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 جون2018ء) مقبوضہ کشمیر میں معروف صحافی شجاعت بخاری کو فائرنگ کر کے قتل کر دیا گیا،موٹر سائیکل پر سوار افراد نے انہیں فائرنگ کا نشانہ بنایا،امن مخالف قوتوں ے خلاف ہمیں متحد ہو جانا چاہیے۔کشمیر میڈیا سیل کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے معروف صحافی شجاعت بخاری کو فائرنگ کر کے قتل کر دیا گیا ہے۔ بخاری اپنے اخبار کے دفتر سے واپس روانہ ہو رہے تھے جب موٹر سائیکل پر سوار افراد نے انہیں فائرنگ کا نشانہ بنایا۔

بھارت کے زیر انتظام کشمیر میں آج جمعرات 14 جون کو ایک معروف صحافی شجاعت بخاری کو فائرنگ کر کے قتل کر دیا گیا۔ بھارتی حکام کے مطابق بخاری عسکریت پسندوں کی فائرنگ کا نشانہ بنے۔ ریاستی پولیس کے سربراہ ایس پی وید کے مطابق موٹر سائیکل پر سوار نا معلوم مسلح افراد نے بخاری پر اس وقت فائرنگ کی جب وہ اپنے اخبار کے دفتر سے نکل کر واپس گھر کی جانب روانہ ہو رہے تھے۔

(جاری ہے)

شجاعت بخاری رائزنگ اسٹار نامی اخبار کے ایڈیٹر تھے۔۔جرمن خبر رساں ادارے ڈی پی اے کے مطابق فائرنگ کے بعد شجاعت بخاری کو شدید زخمی حالت میں ہسپتال پہنچایا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے انتقال کر گئے۔ ایس پی وید کے مطابق ان کی حفاظت پر مامور دو سکیورٹی گارڈز بھی فائرنگ کا نشانہ بنے اور ان میں سے ایک گارڈ بھی مارا گیا ہے۔۔بھارتی زیر انتظام کشمیر کی وزیر اعلی محبوبہ مفتی نے اپنے ٹوئیٹر پیغام میں لکھا، شجاعت کے قتل سے دہشت گردی ایک نئی پستی تک پہنچ چکی ہے۔ اور وہ بھی عید کی شام۔ محبوبہ مفتی نے مزید لکھا، امن کے قیام کی ہماری کوششوں کو نقصان پہنچانے میں مصروف قوتوں کے خلاف ہمیں متحد ہو جانا چاہیے۔