پی ٹی آئی نے چوہدری نثار سے سیٹ ایڈجسٹمنٹ کے امکان کو رد کردیا

چوہدری نثار نہ تو تحریک انصاف کا حصہ ہیں اور نہ ہی ان سے سیٹ ایڈجسٹمنٹ ہوئی ہے ،ْفواد چوہدری ْپی ٹی آئی 25 جولائی کے انتخابات میں چوہدری نثار کے خلاف کلین سویپ کرے گی ،ْغلام سرور خان

پیر جون 15:40

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 جون2018ء) پاکستان تحریک انصاف نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے ناراض رہنما اور سابق وزیرداخلہ چوہدری نثار سے انتخابات میں سیٹ ایڈجسٹمنٹ کے حوالے سے امکان کو رد کردیا۔پی ٹی آئی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات فواد چوہدری نے ایک انٹرویومیں بتایا کہ پی ٹی آئی نے پہلے ہی پارٹی کے سینئر نائب صدر غلام سرور خان کوچار میں سے تین نشستوں پر چوہدری نثار کے خلاف باضابطہ امیدوار نامزد کر دیا ہے۔

فواد چوہدری نے سیٹ ایڈجسٹمنٹ کے تاثر کو رد کرتے ہوئے کہا کہ چوہدری نثار نہ تو تحریک انصاف کا حصہ ہیں اور نہ ہی ان سے سیٹ ایڈجسٹمنٹ ہوئی ہے جبکہ وہ پہلے ہی آزاد حیثیت میں الیکشن لڑنے کا اعلان کرچکے ہیں۔خیال رہے کہ پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان ماضی میں کئی مرتبہ چوہدری نثار کو پی ٹی آئی میں شمولیت کی دعوت دے چکے ہیں تاہم انھوں نے عمران خان کی پیش کش کو نہ تو قبول کیا اور نہ ہی کوئی جواب دیا۔

(جاری ہے)

اس حوالے سے غلام سرور خان کا کہنا تھا کہ انھیں عمران خان نے کہا کہ وہ صرف اس صورت میں دستبردار ہوں جب چوہدری نثار پی ٹی آئی کے ٹکٹ کے لیے درخواست دیں۔انہوںنے کہاکہ میں نے پی ٹی آئی کے سربراہ کو کہا تھا کہ وہ چوہدری نثار کے خلاف تمام حلقوں میں کاغذات نامزدگی جمع کرادیں گے۔غلام سرور خان نے 2013 کے انتخابات میں چوہدری نثار کو ٹیکسلا کی نشست سے شکست دی تھی اور اب ان کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی 25 جولائی کے انتخابات میں چوہدری نثار کے خلاف کلین سویپ کرے گی۔سابق وزیرداخلہ چوہدری نثار نے دو قومی اور دو صوبائی اسمبلی کی نشستوں کیلئے آزاد حیثیت میں کاغذات نامزدگی جمع کرادئیے ۔