بلوچستان میں ما ضی کی نسبت امن و امان کی صورتحال بہتر ہے ،آغا عمر جان بنگلزئی

نگراں حکومت قانون کے مطابق پر امن و شفا ف انتخابات کروانے کے لئے کوشاں ہے، ،نگراں صوبائی وزیر

پیر جون 16:00

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 جون2018ء) نگراں صوبائی وزیر برائے قانون و پارلیمانی امور،،کھیل ثقافت آغا عمر جان بنگلزئی نے کہا ہے کہ بلوچستان میں ما ضی کی نسبت امن و امان کی صورتحال بہتر ہے ، نگراں حکومت قانون کے مطابق پر امن و شفا ف انتخابات کروانے کے لئے کوشاں ہے ، بلوچستان کے مسائل حقیقی عوامی نمائندے کر سکتے ہیں جنہیں عوام نے اپنے ووٹ کی طاقت سے منتخب کرنا ہے ،انہوں نے یہ بات بولان کے صحافیوں کے ایک وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کہی ، آغا عمر بنگلزئی نے کہا کہ بلوچستان میں پر امن اور شفا ف انتخابات کر وانے کے چیلج کے ساتھ آئے ہیں نگراں حکومت کی روز اول سے یہی کوشش ہے کہ یہاں کے عوام کو ہر ممکن طور پر امن امان دے سکیں ہمارے کندھوں پر اہم ترین ذمہ داری ہے جسے بخوبی نبھانے کی بھر پور کوشش کریں گے انہوں نے کہا کہ غیر جانبدار اور صاف شفاف الیکشن کے انعقاد کیلئے تمام وسائل کو بروئے کار لائے جائیں گے جمہوری طرز روایات کو زندہ کرکے قومی فریضہ احسن طور پر سر انجام دیں سکیں،انہوں نے کہا کہ چیئرمین سینیٹ کا عہدہ فیڈریشن کی علامت ہے چیئر مین سینیٹ کا بلوچستان سے انتخاب خوش آئند ہے اس سے بلوچستان کے مسائل کو وفاق میں اجاگر کر نے اور ان مسائل کو حل کر نے میں مدد ملے گی ،چیئرمین سینٹ میر محمد صادق سنجرانی بلوچستان کے مسائل سے بخوبی آگاہ ہیں اور انہیں اپنی ترجیحات میں شامل کرکے حل کرنے کی پوری صلاحیت رکھتے ہیں انہوں نے کہا کہ ایسے عہدے چھوٹے صوبوں کو دینے سے انکا احسا س محرمی کم کیا جاسکتا ہے انہوں نے کہا کہ چیئرمین سینیٹ کا عہدہ روٹیشن پالیسی کے تحت تمام صوبوں کو ملنا چاہیے اور اس پر کسی صوبے کی اجارہ داری نہیں ہونی چاہیے ایسا کر نے سے فیڈریشن مضبوط ہوگی ۔