ریحام خان کا عمران خان پر ایک اور الزام

ریحام خان کے ٹویٹر پیغام میں نئی بحث چھیڑ دی

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین منگل جون 12:19

ریحام خان کا عمران خان پر ایک اور الزام
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 19 جون 2018ء) : پی ٹی آئی چئیرمین عمران خان کی دوسری سابقہ اہلیہ ریحام خان نے اپنی کتاب کی وجہ سے خبروں میں کافی جگہ بنائی، اپنی کتاب میں ریحام خان نے اپنے سابق شوہر اور پی ٹی آئی چئیرمین عمران خان پر سنگین نوعیت کے الزامات عائد کیے جس پر انہیں خود بھی سخت تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔ گذشتہ روز ریحام خان نے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں عمران خان پر ایک اور الزام عائد کیا جس نے ایک نئی بحث کو جنم دے دیا ہے۔

اپنے ٹویٹر پیغام میں ریحام خان نے کہا کہ جیو کے بعد اب دنیا نیوز چینل کی انتظامیہ نے اپنے اسلام آباد کے بیوروچیف صحافی ابراہیم راجا کو ہٹا کر عمران خان کے فین کلب کے رکن خاور گھمن کو اسلام آباد میں بیورو چیف تعینات کر دیا ہے۔

(جاری ہے)

ریحام خان نے کہا کہ اگرچہ ابراہیم راجا ایک پیشہ ورانہ صحافی ہیں لیکن جیو نیوز کے بعد اب دنیا ٹی وی نے بھی سمجھوتہ کر لیا ہے۔

ریحام خان کے اس دعوے نے صحافتی حلقوں میں گزشتہ ایک ہفتے سے جاری اس بحث کو پبلک کر دیا ہے۔ صحافتی حلقوں میں یہ کہا جا رہا ہے کہ دنیا نیوز کی انتظامیہ پر مقتدر حلقوں کا دباؤ ہے اور مطالبہ کیا جا رہا ہے کہ اینکر کامران خان کے پروگرام کے ایڈیٹوریل پر نظرثانی کی جائے۔ ذرائع کے مطابق ابراہیم راجا کی دنیا نیوز سے برطرفی کامران خان کے لیے ایک پیغام ہے کیونکہ ان کو اسلام آباد میں کامران خان کی ٹیم کا اہم رکن سمجھا جاتا تھا ۔ ذرائع نے دعوٰی کیا ہے کہ دنیا نیوز کی انتظامیہ اپنے صدر کامران خان کے پروگرام کے وقت کو تبدیل کرنے پر بھی غور کر رہی ہے۔عمران خان کی سابقہ اہلیہ ریحام خان کے ٹویٹ سے اس بحث کو مزید تقویت ملی ہے۔