جہاز میں بھیک مانگنے کا واقعہ پاکستان کا نہیں،

بھیک مانگنے کا واقعہ قطر ائیرویز کی پرواز میں پیش آیا جہاں دوحہ سے شیراز جانے والی پرواز میں ایرانی مسافرنے بھیک مانگی، سول ایوی ایشن اتھارٹی

منگل جون 16:05

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 جون2018ء) سول ایوی ایشن اتھارٹی نے طیارے میں بھینک مانگنے کے واقعے کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس طرح کا واقعہ پاکستان کے کسی ائیر پورٹ پر پیش نہیں آیا۔تفصیلات کے مطا بق گزشتہ دنوں ایک بھکاری کے طیارے میں مسافروں سے بھینک مانگنے کی ویڈیو سامنے آئی جو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی جب کہ ویڈیو سے متعلق کہا گیا کہ ویڈیو پاکستانی ائیرلائن کی ہے اور یہ واقعہ کراچی ائیرپورٹ پر پیش آیا۔

(جاری ہے)

سوشل میڈیا صارفین نے روایتی طور پر تصدیق اور تحقیق کیے بغیر ویڈیو شیئر کی جس پر سول ایوی ایشن اتھارٹی کا رد عمل سامنے آیا ہے۔ترجمان سول ایوی ایشن اتھارٹی کے مطابق طیارے میں بھیک مانگنے کا واقعہ پاکستان کے کسی ائیر پورٹ پر پیش نہیں آیا، میڈیا میں خبر آئی کہ واقعہ کراچی ائیرپورٹ پر پیش آیا جو کہ غلط ہے۔ایوی ایشن ذرائع نے بتایا کہ طیارے میں بھیک مانگنے کا واقعہ قطر ائیرویز کی پرواز میں پیش آیا جہاں دوحہ سے شیراز جانے والی پرواز میں ایرانی مسافرنے بھیک مانگی۔