الیکشن 2018 ملک بھرمیں اپیلٹ ٹربیونلزنے کام شروع کردیا

Mian Nadeem میاں محمد ندیم بدھ جون 12:43

الیکشن 2018 ملک بھرمیں اپیلٹ ٹربیونلزنے کام شروع کردیا
اسلام آباد(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین-انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔20 جون۔2018ء) ملک بھرمیں اپیلٹ ٹربیونلزنے کام شروع کردیا ،جس کے بعد 22 جون تک ریٹرننگ افسران کے فیصلوں پراپیلیں دائر ہوں گی۔۔الیکشن کمیشن کے مطابق،بدھ کو ملک بھرکے 849 حلقوں کیلئے 21 اپیلٹ ٹربیوبلز بنائے گئے ہیں۔اپیلٹ ٹربیونلزنے کام شروع کردیا جس کے بعد 22 جون تک ریٹرننگ افسران کے فیصلوں پراپیلیں دائرہوں گی،اپیلٹ ٹربیونلز23 سے 27 جون تک اپیلوں کونمٹائیں گے۔

دوسری جانب الیکشن کمیشن نے ریٹرننگ افسران سے 21 ہزار امیدواروں کی تفصیلات مانگ لیں جس کے بعد امیدواروں کے حلف نامے اوراثاثوں کی تفصیلات ویب سائٹ پر شائع کی جائیں گی۔ریٹرننگ افسران نے امیدواروں کا ڈیٹا اسکین کرکے الیکشن کمیشن سیکرٹریٹ بھجوانا شروع کر دیا ہے۔

(جاری ہے)

عام انتخابات 2018 کے لیے کاغذات نامزدگی مسترد ہونے والے امیدوار آج سے ریٹرننگ افسران کے فیصلوں کے خلاف اپیلیں اپیلیٹ ٹریبونل میں دائر کرسکیں گے۔

الیکشن کمیشن کے مطابق ملک بھرکے 849 حلقوں سے کاغذات نامزدگی منظور یا مسترد ہونے کے خلاف اپیلوں پر سماعت کے لیے ملک بھر میں ہائی کورٹ کے ججز پر مشتمل 21 ٹریبونل تشکیل دیئے گئے ہیں۔یہ ٹریبونل وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ایک ، خیبر پختون خوا میں 6 ، پنجاب میں 8 ، سندھ میں میں 4 اور بلوچستان میں 2 قائم کیے گئے ہیں ، ٹریبونلز میں 22 جون تک اپیلیں دائر کی جاسکیں گی۔

دوسری جانب چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے این اے 53 سے کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے ریٹرننگ افسر کے فیصلے کے خلاف اپیلیٹ ٹریبونل میں اپیل دائر کردی۔انہوں نے درخواست میں موقف اختیار کیا ہے کہ اسلام آباد کے حلقہ این اے 53 میں ان سے متعلق ریٹرننگ افسر کا فیصلہ آئین سے متصادم ہے،اپیلیٹ ٹربیونل آر او کی جانب سے عمران خان سے متعلق فیصلے کو کالعدم قرار دے۔