ہمارامقابلہ داخلی طورپر ملک کو کمزور کرنے والوں سے ہے‘

20کروڑعوام کی قسمت کافیصلہ ناتجربہ کارشخص کے ہاتھوں میں نہیں دیاجاسکتا،قانون کے مطابق کاغذات نامزدگی سے متعلق فیصلہ ہوگا‘کبھی عدالتوں کی توہین نہیں کی‘میرامقابلہ عدلیہ سے نہیں،اس سوچ ہے جس نے مجھے گولی ماری مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما سابق وزیرداخلہ احسن اقبال کی توہین عدالت کیس میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو

بدھ جون 13:39

ہمارامقابلہ داخلی طورپر ملک کو کمزور کرنے والوں سے ہے‘
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 جون2018ء) مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما سابق وزیرداخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ ہمارامقابلہ داخلی طورپر ملک کو کمزور کرنے والوں سے ہے‘20کروڑعوام کی قسمت کافیصلہ ناتجربہ کارشخص کے ہاتھوں میں نہیں دیاجاسکتا،قانون کے مطابق کاغذات نامزدگی سے متعلق فیصلہ ہوگا‘کبھی عدالتوں کی توہین نہیں کی‘میرامقابلہ عدلیہ سے نہیں،اس سوچ ہے جس نے مجھے گولی ماری۔

وہ بدھ کو لاہور ہائیکورٹ میں توہین عدالت کیس میں پیشی کے بعد میڈیاسے گفتگو کررہے تھے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ ملکی ترقی اورامن کے لئے پالیسیوں میں 5سال تک تسلسل درکارہوتاہے جبکہ عمران خان کی پالیسیوں میں کوئی تسلسل نہیں ہے وہ تو نگراں وزیراعلیٰ سے متعلق فیصلہ تک نہیں کرپائے۔ان کامزید کہنا تھا کہ قانون کے مطابق کاغذات نامزدگی سے متعلق فیصلہ ہوگا ،20کروڑعوام کی قسمت کافیصلہ ناتجربہ کارشخص کے ہاتھوں میں نہیں دیاجاسکتا۔

ہمارامقابلہ داخلی طورپر ملک کو کمزور کرنے والوں سے ہے۔۔احسن اقبال کا مزید کہنا تھا کہ 5سال قبل دہشتگردی سے روزانہ 40سے زائدافرادمارے جاتے تھے،مسلم لیگ(ن)کی حکومت نے ملک میں امن قائم کیا اور میں نے کبھی عدالتوں کی توہین نہیں کی،میرامقابلہ عدلیہ سے نہیں،اس سوچ ہے جس نے مجھے گولی ماری۔