سرحدوں کو تبدیل کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی،بن علی یلدرم

سامراجی قوتیں مشرقِ وسطی کی سرحدوں کو تبدیل کرنے کے درپے ہیں، ترکی شام اورعراق میں موجود تمام دہشت گردوں کا قلع قمع کرکے ہی دم لے گا،دہشتگردی کا مکمل خاتمہ کیا جائے گا،ترک وزیر اعظم

بدھ جون 14:37

ازمیر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 جون2018ء) ترک وزیراعظم بن علی یلدرم نے کہا ہے کہ کسی بھی صورت اب سرحدوں کو تبدیل کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی، سامراجی قوتیں مشرقِ وسطی کی سرحدوں کو تبدیل کرنے کے درپیہیں، ترکی شام اورعراق میں موجود تمام دہشت گردوں کا قلع قمع کرکے ہی دم لے گا۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق ترک وزیراعظم بن علی یلدرم نے کہا کہ ترکی کسی بھی صورت اب سرحدوں کو تبدیل کرنے کی اجازت نہیں دے گا۔

انہوں نے کہا کہ ترکی اس وقت اپنی تاریخ کے لحاظ سے طاقتور قوت کی حیثیت اختیار کیے ہوئے ہے۔۔وزیراعظم بن علی یلدرم نے کہا ہے کہ شام کے علاقے منبیج کے بعد کوبانی ، قامشلی اور حسیکہ کے علاقوں کو بھی دہشت گردوں سے مکمل طور پر پاک کردیا جائے گا۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار ازمیر میں کاروباری افراد کے ساتھ اپنی ملاقات کے دوران کیا۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ سامراجی قوتیں مشرقِ وسطی کی سرحدوں کو تبدیل کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ترکی کسی بھی صورت اب سرحدوں کو تبدیل کرنے کی اجازت نہیں دے گا۔ انہوں نے کہا کہ ترکی اس وقت اپنی تاریخ کے لحاظ سے طاقتور قوت کی حیثیت اختیار کیے ہوئے ہے ۔انہوں نے کہا کہ سامراجی قوتیں ایک سو سال بعد پھر وہی کھیل کھیلنا چاہتی ہیں جو آج سے ایک سو سال قبل کھیل چکی ہیں۔انہوں نے کہا کہ ترکی نے ایک طاقتور ملک ہونے کے ناتے شاخ زیتون فوجی آپریشن کرتے ہوئے ان سامراجی قوتوں کے اس کھیل کو بگاڑ کے رکھ دیا ہے اور شام کی سرحدوں کے ساتھ 4 ہزار کلو میٹر رقبے کو دہشت گردوں سے پاک کردیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ترکی نے پہلے اپنی حدود کے اندر دہشت گردوں کا صفایا کیا ہے اور اب ان علاقوں سے ان دہشت گردوں کو مکمل صفایا کیا ہے جہاں یہ پناہ لیے ہوئے تھے۔

متعلقہ عنوان :