دشت میں پولیس ،ایف سی اور سکیورٹی اداروں کی مشترکہ کارروائی

فائرنگ کے تبادلے میں کالعدم تنظیم سے تعلق رکھنے والے خاتون سمیت چاردہشت گردہلاک ہوگئے ہلاک دہشتگرد ٹارگٹ کلنگ اور دہشتگردی کی مختلف کارروائیوں میں ملوث تھے، ڈپٹی انسپکٹر جنرل پولیس کوئٹہ عبدالرازاق چیمہ ، ڈپٹی انسپکٹر جنرل محکمہ انسداد دہشتگردی اعتزار گورایہ ، کمانڈنٹ غزاء بند اسکائوٹس ایف سی کرنل رب نواز کی مشترکہ پریس کانفرنس

بدھ جون 18:00

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 جون2018ء) ریجنل پولیس آفیسر و ڈپٹی انسپکٹر جنرل پولیس کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ ، ڈپٹی انسپکٹر جنرل محکمہ انسداد ہشتگردی اعتزار گورایہ ، کمانڈنٹ غزاء بند اسکائوٹس ایف سی کرنل رب نواز نے کہا ہے کہ ضلع مستونگ کے علاقے دشت میں پولیس ،،ایف سی اور سکیورٹی اداروں کی مشترکہ کارروائی میں فائرنگ کے تبادلے میں کالعدم تنظیم سے تعلق رکھنے والے ایک خاتون سمیت چاردہشت گردہلاک ہوگئے ہلاک ہونے والوں کی شناخت حق نواز اور عاصم کے ناموں سے ہوئی ہے آپریشن میں چھ سکیورٹی اہلکارزخمی ہوئے جبکہ خود کش حملے میں ایک راہگیر بچہ جاں بحق جبکہ ایک خاتون بھی زخمی ہوئی ، پر امن انتخابات کروانے کے لئے ہر ممکن کوشش کریں گے ،انہوں نے یہ بات بدھ کو سی سی پی آفس کوئٹہ میں مشترکہ پر یس کانفر نس کر تے ہوئے کہی ،ڈی آئی جی پولیس عبدالرزاق چیمہ نے کہا کہ پولیس ایف سی اور سکیورٹی اداروں نے ضلع مستونگ کے علاقے دشت میں تیر ہ میل کے مقا م پر دہشتگردوں کے خلا ف کا میاب کارروائی کی کارروائی گرفتار دہشت گردفضل حق اور سکیورٹی اداروں کی اطلاع پر کی گئی کاروائی کے دوران دہشتگرد وں نے کمپا ئونڈ سے شدید مذاہمت کی اور انکے ایک حملہ آوروں نے سکیورٹی فورسز پر خود کش حملہ بھی کیا خود کش حملہ آور سیکورٹی فورسز کی گا ڑی میں داخل ہو کر خود کو اڑانا چاہتا تھا،خود کش دھماکے کی آڑ میں ہلاک ہونیوالا عاصم اور خاتون دہشت گرد فرار ہو نا چاہتے تھے جنہیں مار گرایا ،انہوں نے بتا یا کہ کارروائی کے دوران فضل حق اور 1 خاتوں سمیت 4 دہشتگرد ہلاک ہوئے،،ہلاک دہشت گرد وں میں شامل عاصم دہشتگرد ی اورفورسز کو نشانہ بنانے کی واردارتوں میںملوث تھا جبکہ اس نے سکیورٹی فورسز پر حملوں کی دھمکی بھی دے رکھی تھی انہوں نے کہا کہ دہشتگردوں کے مکان سے آر آر جی فورس کی وردی بھی ملی ہے ،آپریشن میںماری جانے والی خاتون دہشتگردوں کی ساتھی تھی جو پولیس پر فائرنگ کررہی تھی پہلے سے گرفتار دہشتگرد نے اعتراف کیا تھا کہ عاصم اور اسکی بیوی دہشتگردی کی کاروائیوں میں ملوث تھے وہ ٹارگٹ کلنگ کی واردات کر نے کے بعد خاتون کو موٹر سائیکل پر بیٹھا کر اسکی آر میں فرار ہوتے تھے جس سے ان پر کسی کو شک نہیں ہوتا تھا جبکہ یہ تمام لوگ اسلحہ استعمال کر نے میں ماہر تھے کاروائی کے بعد اسلحے کو کھول کر چھپا لیا کرتے تھے ،انہوں نے بتایا کہ قوی امکان ہے کہ یہی گروہ عیدکے روزکلی بنگلزئی میں لیویز اہلکار کے قتل میں بھی ملوث ہواس موقع پر کمانڈنٹ ایف سی کرنل رب نواز اور ڈی آئی جی سی ٹی ڈی اعتزازگورایہ کاکہناتھا کہ کارروائی کے دوران خود کش جیکٹس،راکٹ لانچر،6 دیسی ساختہ بم،گولیاں موبائل برآمد ہوئے، ایف سی کو صبح پانچ بجے آپریشن کی اطلاع دی گئی جس کے بعد سکیورٹی فورسز نے ملکر کر آپریشن کا دائرہ کار وسیع کرتے ہوئے کامیاب آپریشن کیا ایک سوال کے جواب میں ڈی آئی جی عبدالرزاق چیمہ نے کہا کہ دہشت گردوں کیخلاف ہماری جنگ جاری ہے اور ان کا قلع قمع کئے جانے تک جاری رہے گی عوام رینٹ ایکٹ پر عملد رآمد کو یقینی بنائیں کوئٹہ کے علا قے نواں کلی میں بھی پولیس افسر پر دہشتگروں نے حملہ کیا ہے اسکی تحقیقات جاری ہیں ،انہوں نے کہا کہ پر امن انتخابات کے انعقاد کے لئے پولیس سمیت تمام ادارے ملکر کام کر رہے ہیں اور ماضی کی طرح اس بار بھی انتخابات کو پر امن طور پر منعقد کیا جائے گا ۔