ہمارا دین اسلام اجتماعیت ، خوشحالی اور بھائی چارگی کا درس دیتا ہے، حافظ حسین احمد

ملک کے تمام مسائل کا حل اسلامی نظام کے نفاذ میں مضمر ہے اس لئے اسلام کے نام پر بننے والے مملکت خداداد میںنیک اور صالح قیادت کو لا کر مسائل کے حل کو یقینی بنایا جا سکتا ہے، مرکزی سیکرٹری اطلاعات جمعیت علمائے پاکستان

بدھ جون 20:00

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 جون2018ء) جمعیت علما اسلام پاکستان کے مرکزی سکرٹری اطلاعات ومتحدہ مجلس عمل کی مرکزی کمیٹی کے چیئرمین 266 کے نامزد امیدوار مولانا حافظ حسین احمد نے کہاکہ ہمارا دین اسلام اجتماعیت ، خوشحالی اور بھائی چارگی کا درس دیتا ہے اس لئے ملک کے تمام مسائل کا حل اسلامی نظام کے نفاذ میں مضمر ہے اس لئے اسلام کے نام پر بننے والے مملکت خداداد میںنیک اور صالح قیادت کو لا کر مسائل کے حل کو یقینی بنایا جا سکتا ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز اپنی رہائش گاہ جامعہ مطلع العلوم میں بلوچستان کے مختلف علاقوں سے آنیوالے جمعیت علماء اسلام کے رہنمائوں ، قبائلی شخصیات، ورکروں ، مولانا خیر جان ،مولانا محمد امین، مولانا حکیم محمد عیسیٰ، مولانا محمد عمر، مولانا سمیع اللہ علوزئی، مولانا عزیز اللہ سمیت دیگر سے گفتگو کے دوران کیا اس موقع پر صاحبزادہ حافظ منیر احمد ایڈووکیٹ ، مولانا حافظ محمد طاہر تو حیدی، صاحبزادہ حافظ زبیر احمد، حافظ سعید،، حافظ محمود ، ظفر حسین احمد، انس محمود سمیت دیگر بھی موجود تھے حافظ حسین احمد نے کہا ہے کہ حکمران عوام کے مسائل کو حل کرنے کی بجائے ان میں اپنی غلط پالیسیوں اور اقدامات سے اضافہ کرنے میں مصروف ہے جس کی وجہ سے ملک اور قوم مختلف مسائل اور بحرانوں سے دوچار ہے اور ہر طرف افرا تفری کا سماں ہے کیونکہ حکمرانوں کو ملک اور قوم کے اجتماعی مفادات اور مسائل کے حل سے کوئی غرض اور سروکار نہیں انہیں اپنے ذاتی اور گروہی مفادات عزیز ہے اس لئے آج بھی ملک بھر کی طرح بلوچستان میں بد امنی ، دہشت گردی ، بے روزگار عروج پر ہے کیونکہ حکمرانوں نے ان سلگتے ہوئے مسائل کے حل کو یقینی بنانے کے لئے کوئی کردار ادا نہیں کیا جس کی وجہ سے پاکستان اور بلوچستان میں بدامنی اور بے روزگاری عروج پر ہے لوگ ان دونوں سے بری طرح متاثر ہے ان مسائل کا حل ملک میں نیک اور صالح قیادت اور عوامی نمائندوں کو ایوان میں لانا ہے اس لئے جماعت کے کارکن انتخابی مہم کو تیز کرے تاکہ لو گوں کے مسائل کو ترجیح بنیادوں پر حل کر کے بلوچستان کو پاکستان کے دیگر صوبوں کی طرح ترقی کی راہ پر گامزن کیا جا سکے بلوچستان کو قدرتی وسائل سے اللہ تعالیٰ نواز رکھا ہے ضرورت اس امر کی ہے کہ انہیں قابل استعمال لا کر صوبے کو ترقی کی راہ پر گامزن کیا جا سکے۔