محکمہ زراعت توسیع کی فیلڈ سروسز کو مؤثر بنانے کیلئے اقدامات تیز کر دیئے گئے

جمعرات جون 14:44

فیصل آباد۔21 جون(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 جون2018ء) کاشتکاروں تک زرعی معلومات ، جدید پیداواری ٹیکنالوجی ، مشینری کے استعمال بارے آگاہی ، زرعی تحقیق کے نتائج سے روشناسی اور مختلف اجناس کی فی ایکڑ پیداوار میں اضافہ سمیت محکمہ زراعت توسیع کی فیلڈسروسز کو مؤثر و فعال بنانے کیلئے اقدامات تیز کر دیئے گئے ہیں۔ زرعی ماہرین نے کہاکہ زرعی سائنسدان اور ماہرین ٹیلی فون کالز، ٹیکسٹ میسجنگ، ویڈیو، فارم ریڈیو ، فیس بک اور ٹویٹر کے ذریعے زرعی معلومات اور جدید مشینری کے استعمال بارے کاشتکاروں کو آگاہی فراہم کریں ۔

انہوں نے کہا کہ ریاستہائے متحدہ امریکہ میں 1914ء میں توسیع سروسز کا آغاز ہوا۔انہوںنے کہاکہ دور حاضر میں تیز ترین مواصلاتی نظام نے دنیا میں ایک انقلاب برپا کردیا ہے جس میں انٹرنیٹ کا نظام سرفہرست ہے اورانفارمیشن اینڈ کمیونیکیشن ٹیکنالوجیز ذرائع ابلاغ کا جدید اور مؤثر ذریعہ ہیں۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہاکہ حکومت پنجاب نے زرعی تحقیق کے نتائج اور فصلوں کے جدید ٹیکنالوجی کے پیکچ کو بلاتاخیر کاشتکاروں تک پہنچانے کیلئے محکمہ زراعت توسیع پنجاب کی فیلڈ سروسز کو مؤثر اور فعال بنانے کی غرض سے اس کی تشکیل نو کیلئے 150ملین روپے مختص کئے ہیں جبکہ ماہرین زراعت پر مشتمل ایک کمیٹی بھی تشکیل دی گئی ہے جو محکمہ زراعت توسیع کے آفیسران کو انفارمیشن اور کمیونیکیشن ٹیکنالوجیزکے مؤثر استعمال بارے سفارشات مرتب کرکے فراہم کرے گی نیزان سفارشات کی روشنی میں محکمہ زراعت توسیع میں بنیادی تبدیلیاں کی جائیں گی اور توسیعی آفیسران ذرائع ابلاغ کے مؤثر استعمال سے پنجاب کے چھوٹے اور ناخواندہ کاشتکاروں تک زرعی معلومات اور ٹیکنالوجی کی منتقلی میں مد د فراہم کریں گے۔

انہوں نے بتایا کہ صوبہ پنجاب کی آبادی 10کروڑ کے قریب ہے جبکہ مذکورہ آبادی کا 70فیصد حصہ دیہاتوں میں رہائش پذیر ہے جن کی اکثریت کا ذریعہ معاش کاشتکاری ہے۔ انہوںنے بتایاکہ محکمہ زراعت توسیع پنجاب نے 1 لاکھ سے زائد کاشتکاروں کا ڈیٹا مرتب کرکے انفارمیشن اینڈ کمیونیکیشن ٹیکنالوجیز کے ذریعے جدید زرعی معلومات کی فراہمی شرو ع کردی ہے۔

انہوںنے کہاکہ مقامی زرعی جامعہ نے سرکاری اور نیم سرکاری اداروں کے باہمی اشتراک سے زراعت سے وابستہ لوگوں کی سہولت کیلئے مختلف پروگرام شروع کئے ہیں اور کسانوں کو جدید ترین زرعی معلومات فراہم کرنے کا بیڑا اٹھا یا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ مذکورہ جامعہ اورمحکمہ زراعت توسیع حکومت پنجاب کے تعاون سے دور حاضر کے تیز تر مواصلاتی نظام کو استعمال میں لاتے ہوئے کسانوں تک جدید معلومات اور مفید مشورے ان کی دہلیزتک پہنچائے جارہے ہیں جس کے انتہائی مفید نتائج حاصل ہو رہے ہیں اور توقع ہے کہ مستقبل میں زرعی اجناس کی پیداوار میں خاطر خواہ اضافہ یقینی بنایاجاسکے گا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :