انا ر کے پودوں کو ضرررساں کیڑوں کے حملہ سے محفوظ رکھیں ، زرعی ماہرین

جمعرات جون 14:44

سلانوالی۔21 جون(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 جون2018ء) ز رعی ماہرین نے انا ر کے باغبانو ں کو سفارش کی ہے کہ و ہ پودوں کوضرررساں کیڑوں کے حملہ سے محفوظ رکھیں۔ موسم ِگرما میں انار کے پودوں پر مختلف ضرررساں کیڑے انار کی تتلی سکیلز سفید مکھی پھل کی مکھی وغیر ہ حملہ آورہوتے ہیں سکیلز اور سفید مکھی پتوں فصل کو کمزور کرتے ہیں جسم سے فاسد ماد ہ خار ج کرتی ہیں جس سے سیا ہ اُلی ا گ آتی ہے جس سے ضیائی تالیف کا عمل متاثرہوتا ہے ۔

(جاری ہے)

انا ر کے پودے پر حملہ کی صورت میں کا ر بو سلفان 20ا ی سی بحسا ب 2.5ملی لیٹر فی لیڑ پانی میں حل کرکے سپرے کر یں۔انا ر کی تتلی اور پھل کی مکھی پھل کے اندر سوراخ کر کے داخل ہوجاتی ہے اور اندر سے پھل کھا کر نقصان کرتی ہے ان سوراخوں پر بیکٹریاں اور فنگس حملہ آوورہوتے ہیں جس سے پھل گل سڑ جاتا ہے متاثرہ پھل کو اکھٹا کر کے زمین میں دبا دیں ان کیڑوں کے حملہ کی صورت میں لمڈا سائی ہیلو تھرین یا ٹرائی کلوفا ن بحسا ب 2.5ملی لیٹر فی لیڑ پانی میں ہل کر کے سپر ے کریں ۔

متعلقہ عنوان :