متحدہ عرب امارات: خاتون سے جنسی چھیڑ چھاڑ کرنے والا پولیس کے ہتھے چڑھ گیا

بنگلہ دیشی ملزم نے بھارتی آفس سیکرٹری کو پارکنگ لاٹ میں جنسی ہراسگی کا نشانہ بنایا

جمعرات جون 15:20

دٴْبئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 جون2018ء) بھارتی خاتون کا پیچھا کر کے اٴْسے پارکنگ ایریا میں گلے لگانے اور جسم کو چھٴْونے کے الزام میں بنگلہ دیشی شہری کو عدالتی کارروائی کا سامنا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ایک دفتر میں سیکرٹری کی خدمات انجام دینے والی بھارتی خاتون مارچ 2018ئ کی ایک رات کو ساڑھے نو بجے معمول کے مطابق جِم جا رہی تھی۔ جب وہ پارکنگ ایریا سے گٴْزری تو اٴْس نے ایک نامعلوم 38سالہ بنگلہ دیشی فرد کو دیکھا۔

اس وقت پارکنگ ایریا خالی تھا جس کا فائدہ اٴْٹھاتے ہوئے بنگلہ دیشی آناً فاناً خاتون کے قریب پہنچ کر اٴْسے گلے لگا لیا اور اس کے جسم کو حصّوں کو بھی چٴْھوا۔ ایسا کرنے کے کچھ دیر بعد وہ موقع سے فرار ہو گیا۔ خاتون نے اس واقعے کی اطلاع فوری طور پر موبائل فون کے ذریعے پولیس کو دی جو چند منٹوں میں جائے وقوعہ پر پہنچ گئی۔

(جاری ہے)

پولیس والوں نے ملزم کو شناخت کرنے کے لیے خاتون کو گاڑی میں بٹھا لیا جہاں وہ دس منٹ تک النہدہ کے علاقے میں سڑکوں پر پھرتے رہے اچانک خاتون کو جنسی ہراسگی کا نشانہ بنانے والا بنگلہ دیشی دکھائی دے دیا جس پر پولیس نے اٴْسے فوراً گرفتار کر لیا۔

ملزم نے عدالت میں اپنے جٴْرم کو تسلیم کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ ملزم کو گرفتار کرنے والے پولیس اہلکار نے عدالت میں بیان دیتے ہوئے کہا کہ خاتون کی شکایت پر ہم النہدہ کے علاقے میں پہنچے۔ خاتون کو پولیس کی گاڑی میں سوار کرا کے ملزم کی تلاش میں پھرتے رہے۔ اچانک ایک زیر تعمیر عمارت کے پاس خاتون نے ملزم کو دیکھتے ساتھ ہی چِلا کر کہا کہ یہی وہ شخص ہے جس نے اٴْسے جنسی ہراسگی کا نشانہ بنایا ہے۔ ملزم خاتون کے چِلانے پر گھبرا اٴْٹھا۔ ہم نے فوراًسے گرفتار کرلیا۔ اس مقدمے کا فیصلہ 26 جٴْون 2018 کو سنایا جائے گا۔