عامر لیاقت کی بھی ڈاکٹری کا پول کھل گیا

الیکشن کمیشن میں جمع کرائے گئے کاغذات نامزدگی میں عامر لیاقت حسین نے اپنے نام کیساتھ ڈاکٹر نہیں لکھا

جمعرات جون 15:23

عامر لیاقت کی بھی ڈاکٹری کا پول کھل گیا
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 جون2018ء) عامر لیاقت اب ڈاکٹر نہیں رہے۔سابق وزیراعلیٰ بلوچستان اسلم رئیسانی کی ڈگری ڈگری ہوتی ہے اصلی ہو یا جعلی ہو والی منطق پر عامر لیاقت پورے اترے۔انہوں نے بطور ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کے خوب نام کمایا مگر وہ بھی اسلم رئیسانی کے فلسفے کے مصداق ڈاکٹر ڈاکٹر ہوتا ہے نام کا ہو یاایم بی بی ایس ہو۔کو عملی جامہ پہناتے رہے۔

اور پاکستان سمیت دنیا بھر میں ان کے چاہنے والے انہیں ڈاکٹر ہی سمجھتے رہے مگر الیکشن 2018 سے قبل جہاں بڑے سیاستدانوں کے بڑے اثاثے سامنے آئے عامر لیاقت کی بھی ڈاکٹری کا پول۔کھل گیا۔۔الیکشن کمیشن میں جمع کرائے گئے کاغذات نامزدگی میں عامر لیاقت حسین نے اپنے نام کیساتھ ڈاکٹر نہیں لکھا ہے۔وہ کراچی سے تحریک انصاف کے ٹکٹ پر قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 245 سے الیکشن میں حصہ لے رہے ہیں۔

(جاری ہے)

اس سے قبل وہ ٹی وی چینلز پر پروگرامات کرتے رہے ہیں جس میں ان کے نام کیساتھ ڈاکٹر لگایا جاتا رہا ہے اور خود عامر لیاقت بھی خود ڈاکٹر عامر لیاقت حسین ہی کہتے رہے تاہم الیکشن کمیشن میں جمع کرائے گئے کاغذات میں انہوں نے اپنی تعلیم صرف ایم اے ظاہر کی ہے اور ایم اے کی ڈگری بھی انہوں نے 2013 میں حاصل کی ہے۔واضح رہے کہ ماضی میں وفاقی اردو یونیورسٹی عبدالحق کیمپس میں عامر لیاقت زیرتعلیم رہے ہیں لیکن وہ ایک دن بھی کلاس نہ لے سکے جس پر طلبہ وطالبات کی جانب سے ان کے خلاف احتجاج بھی کیا گیا تاہم اپنے خصوصی تعلقات کی بنا پر عامر لیاقت کو یونیورسٹی میں کلاسسز لئے بغیر ہی ڈگری تفویض کردی گئی تھی۔