یورپ میں دہشت گرد حملوں میں دگنا اضافہ

گزشتہ سال یورپ میں دہشتگرد تنظیم داعش نے 33حملے کئے ،ْ 2016میں حملوں کی تعداد 13تھی

جمعرات جون 17:00

ہیگ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 جون2018ء) یورپ کی پولیس ایجنسی نے دعویٰ کیا ہے کہ گزشتہ برس یورپ میں دہشت گرد تنظیم داعش نے کٴْل 33 حملے کیے جبکہ سال 2016 میں حملوں کی تعداد 13 ریکارڈ کی گئی۔فرانسیسی میڈیا کے مطابق یورو پول کی جانب سے جاری کردہ سالانہ رپورٹ کے مطابق داعش نے 2017 میں یورپ کے اندر 33 حملوں کیے جس کے نتیجے میں 62 شہری اپنی جان سے گئے ،ْ سیکیورٹی اداروں نے 10 حملوں کو ناکام یا ناکارہ بنایا اس حوالے سے بتایا گیا کہ سال 2016 میں دہشت گردوں نے کٴْل 13 حملے کیے اور 135 اموات ریکارڈ کی گئیں۔

(جاری ہے)

رپورٹ میں انکشاف کیا گیا کہ یورپ میں 2017 کے عرصے میں کیے گئے تمام حملوں میں یورپی نواجون شامل تھے جہنوں نے عسکری تربیت کیلئے کبھی بیرون ملک کا سفر نہیں کیا۔واضح رہے کہ ناروے ، جرمنی اور فرانس میں مسلمانوں کی جانب سے داعش کے خلاف مظاہرے وقفے وقفے سے جاری ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ داعش نے اسلام کو ہائی جیک کرکے نفرت اور تشدد کو فروغ دیا ہے۔اس سے قبل جرمنی کی سینٹرل کونسل آف مسلمز کی چیئرمین ایمن مازیک کا کہنا ہے کہ دہشت گردوں اور قاتلوں نے اسلام کو نفرت اور برائی کی دلدل میں دھکیل کر مسلمانوں کے ساتھ ساتھ پوری دنیا کو مشکل میں مبتلا کردیا ہے۔