ْایک نے آمریت کی گود میں جنم لیا دوسرا طالبان کے دم پر وزیراعظم بننا چاہتا ہے، بلاول بھٹو

ہماری نظریاتی فتح کے باعث بھٹو کے مخالفین بھی ووٹ کے اختیار کو استعمال کرتے ہیں، چیئرمین پاکستا ن پیپلز پارٹی بلاول بھٹو کا شہید بینظیر بھٹو کے یوم ولادت پر تقریب سے خطاب

جمعرات جون 21:50

لاڑکانہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 جون2018ء) چیئرمین پاکستا ن پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے کہاہے کہ ایک نے آمریت کی گود میں جنم لیا اور دوسرا طالبان کے دم پر وزیراعظم بننا چاہتا ہے۔۔شہید بینظیر بھٹو کے یوم ولادت پر بلاول ہائوس میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ بینظیر کی شہادت بھی بینظیر تھی لیکن بھٹو کو ختم کرنے والے بھٹو ازم کو ختم نہیں کرسکتے کیوں کہ بھٹو کا نظریہ آج بھی زندہ ہے جب کہ ہماری نظریاتی فتح کے باعث بھٹو کے مخالفین بھی ووٹ کے اختیار کو استعمال کرتے، فتح اہم ہوتی ہے لیکن اصول بھی اہم ہوتے ہیں اور اس ملک کو بنیادی جمہوری اصول بھی پیپلز پارٹی نے دئیے۔

بلاول بھٹو نے نواز شریف اور عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ایک فرنچائز کا مرکز جاتی امرا میں ہے اور دوسرے کا بنی گالہ میں، ایک شخص لوٹوں کا تاج محل تعمیر کررہا ہے جبکہ دوسرا ووٹ کو عزت دینے کے پیچھے چھپ رہا ہے۔

(جاری ہے)

چیئرمین پی پی نے کہا کہ ایک نے جمہوریت کو بادشاہت سمجھا دوسرا بادشاہت کو جمہوریت سمجھتا ہے، ایک نے سیاست کو تجارت بنایا دوسرے نے سیاست کو حرکت بنالیا، ایک نے آمریت کی گود میں جنم لیا دوسراطالبان کے دم پر وزیراعظم بننا چاہتا ہے۔۔بلاول بھٹو نے مزید کہا کہ سندھ میں سیاسی مچھروں نے حملہ کردیا ہے لیکن سندھ کے بیٹے بیٹیاں ان حملوں کو پسپا کرنے کے لیے نکل آئے ہیں جب کہ جمہوریت ہمارا استحکام ہے اور میں جمہوریت پر سمجھوتا کرنے کو تیار نہیں ہوں۔