پرویز مشرف آل پاکستان مسلم لیگ کی چیئرمین شپ سے مستعفی‘استعفیٰ الیکشن کمیشن کو بھجوا دیا

الیکشن کمیشن میں ڈاکٹر امجد کو پارٹی سربراہ بنانے کی درخواست دائر‘پرویز مشرف پارٹی کے سرپرست اعلیٰ رہیں گے

جمعہ جون 12:10

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 جون2018ء) سابق صدر اور آل پاکستان مسلم لیگ کے چیئرمین پرویز مشرف نے پارٹی عہدے سے استعفیٰ دیدیا۔نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے آل پاکستان مسلم لیگ کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر امجد نے بتایا کہ پرویز مشرف نے آل پاکستان مسلم لیگ کی چیئرمین شپ سے استعفیٰ دے دیا جب کہ استعفیٰ الیکشن کمیشن کو بھی بھجوایا جاچکا ہے۔

آل پاکستان مسلم لیگ کے نئے سربراہ کے لیے الیکشن کمیشن کو درخواست بھی جمع کرادی گئی جس میں ڈاکٹر امجد کو پارٹی سربراہ بنانے کی درخواست دی گئی ہے۔درخواست میں کہا گیا ہے کہ پارٹی رجسٹریشن میں ڈاکٹر امجد کو سربراہ مقرر کیا جائے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پرویز مشرف پارٹی کے سرپرست اعلیٰ رہیں گے۔۔ڈاکٹر امجد کے مطابق پرویز مشرف نے استعفیٰ اس لیے دیا کہ وہ بیرون ملک رہ کر پارٹی نہیں چلا پا رہے تھے اس لیے انہوں نے ڈاکٹر امجد کو نیا پارٹی چیئرمین نامزد کیا۔

(جاری ہے)

ڈاکٹر امجد نے دعویٰ کیا ہے کہ سابق صدر پرویز مشرف کی عدالت سے نااہلی ختم نہیں ہوئی تھی۔واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے عبوری حکم جاری کرتے ہوئے پرویز مشرف کو مہلت دی تھی کہ اگر وہ عدالت میں پیش ہوجاتے ہیں تو انہیں گرفتار نہیں کیا جائے گا اور وہ اپنے کاغذات نامزدگی جمع کراسکتے ہیں۔۔سپریم کورٹ نے 14 جون کو عدم حاضری پر پرویز مشرف کے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کا عبوری حکم واپس لیتے ہوئے سماعت غیر معینہ مدت تک کے لیے ملتوی کردی تھی۔