کاشتکار دالوں کی ڈرل سے لائنوں پر کاشت سے پیداوار میں اضافہ کریں، محکمہ زراعت

جمعہ جون 13:16

فیصل آباد۔22 جون(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 جون2018ء) محکمہ زراعت کے ترجمان نے کہاہے کہملکی خودانحصاری کی منزل کے حصول کیلئے دالوں کی پیداوار میں اضافہ انتہائی نا گزیر ہے لہٰذا کاشتکار دالوں کی ڈرل سے لائنوں پر کاشت اور بوقت کاشت فاسفورس کے استعمال سے فی ایکڑ پیداوار میں اضافہ کریں ۔انہوںنے بتایاکہ محکمہ زراعت کا "دالوں کی پیداوار میں اضافہ کا منصوبہ" دالوں کی پیداوار میں اضافہ، ملکی خود کفالت اور درآمد پر انحصار کے خاتمہ کیلئے اہم سنگ میل ثابت ہو گا۔

انہوںنے کہا کہ کاشتکار دالوں کی کاشت کو گھریلو سطح پر فروغ دیں اور بھرپور پیداوار کے حصول کو یقینی بنائیں کیونکہ اس سے کاشتکاروں کی گھریلو اور ملکی ضرورت پورا کرنے میں مدد ملے گی۔انہوںنے کہا کہ محکمہ زراعت کے مذکورہ منصوبہ کے تحت دالوںکی ترقی دادہ اقسام کے تصدیق شدہ بیج ، ڈرل سے لائنوں میں کاشت، جڑی بوٹی مار ادویات کے استعمال اور دالوں کی مخلوط کاشت کے لیے ماہرین کی زیر نگرانی کاشتکاروں کو مکمل آگاہی اور رہنمائی فراہم کی گئی ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ اس منصوبہ کے تحت دالوں کی پیداواری ٹیکنالوجی کی کاشتکاروں کو ترغیب کیلئے نمائشی پلاٹس لگائے گئے ہیں جہاں سے ریکارڈ پیداوار حاصل کی گئی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ کاشتکاروں کو رعایتی قیمت پر پنجاب سیڈ کارپوریشن کا تصدیق شدہ مونگ، ماش اور مسور کا بیج بھی فراہم کیا گیاہے ۔انہوں نے کہا کہ کاشتکاروں کو ربیع اور خریف کی دالوں کی فی ایکڑ پیداوار میں اضافہ کیلئے جدید پیداواری ٹیکنالوجی کی تربیت دی گئی ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ نمائشی پلاٹس پر استعمال ہونے والے بیج ، جڑی بوٹی مار ادویات اور جراثیمی ٹیکے کے اخراجات حکومت برداشت کررہی ہے جس سے دالوں کی پیداوار میں خاطر خواہ اضافہ کا امکان ہے۔

متعلقہ عنوان :