کینیڈامیں فلسطینی دوشیزہ نے بہترین پناہ گزین کا ایوارڈ اپنے نام کرلیا

جمعہ جون 17:11

اوٹاوا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 جون2018ء) کینیڈا میں انسانی حقوق کیلئے کام کرنیوالے اداروں نے فلسطینی دو شیزہ سارہ ابوالخیر کو سال 2018ء کی سب سے بہترین ’پناہ گزین‘ قرار دیتے ہوئے اسے سال دو ہزار اٹھارہ کا ایوارڈ دیا ہے۔اطلاعات کے مطابق سارہ ابوالخیر کا تعلق غزہ کی پٹی کے شمالی علاقے جبالیا سے ہے۔سماجی رابطوں کی ویب سائیٹ ’فیس بک‘ پر پوسٹ ایک بیان میں سارہ نے لکھا کہ ’میں اپنی اس عظیم کامیابی کو اپنی قوم اور اس کی ا?زادی کے نام ہدیہ کرتی ہوں۔

(جاری ہے)

یہ میری طرف سے غزہ میں صبرو استقلال کا مظاہرہ کرنے عوالے میرے خاندان، شہداء کی ماؤں، پاکیزہ بیٹیوں کے لیے بھی ہدیہ ہے اور یہ سب کچھ میرے شوہر کی کوششوں کا ثمر ہے‘۔سارہ اس وقت کینیڈا کے شہر ٹورانٹوں میں قیام پزیر ہیں۔ انہوں میں کینیڈا میں آنے کے بعد پناہ گزینوں کے حقوق کے لیے نمایاں خدمات انجام دیں، مقامی تعلیمی اداروں اور طلباء تنظیموں کے ساتھ مل کر کام کیا اور پناہ گزینوں کے بچوں کو تعلیم دلوانے کیلئے بھرپور سماجی خدمات مہیا کیں۔

متعلقہ عنوان :