بھارت میں سماجی تنظیم کی پانچ خواتین سے اغواء کے بعد اجتماعی زیادتی

پولیس نے ایف آئی آر درج کرکے ملزمان کی گرفتاری کے لئے کارروائی کا آغاز کردیا

جمعہ جون 21:26

رانچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 جون2018ء) بھارت میں انسانی اسمگلنگ کے خلاف کام کرنے والے این جی او کی پانچ خواتین کو اسٹریٹ تھیٹر کرتے ہوئے نامعلوم مسلح افراد نے اغوا کر کے زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ عالمی میڈیا کے مطابق بھارت کی ریاست جھاڑکھنڈ کے ضلع کٴْھنٹی میں موٹر سائیکل سوار مسلح افراد نے اسلحے کے زور پر فلاحی تنظیم آشا کرن کیلئے کام کرنے والی پانچ خواتین کو اِغوا کرکے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔

خواتین کو اس وقت اغواء کیا گیا جب وہ ایک مصروف علاقے میں انسانی اسمگلنگ کے خلاف عوام میں شعور اجاگر کرنے کے لیے اسٹریٹ تھیٹر کر رہی تھیں۔مقامی پولیس افسر راجیش پرشاد کا کہنا تھا کہ خواتین سے زیادتی کا واقعہ منگل کے روز ہوا ہے جبکہ انہوں نے ایف آئی آر جمعرات کو درج کرائی ،ْ اغوا کی گئی خواتین کا تعلق عیسائی مشنری تنظیم سے تھا، گو کہ مغویوں کو 3 گھنٹے بعد ہی چھوڑ دیا گیا تھا تاہم ملزمان نے خواتین سے زیادتی کی وڈیو بھی بنائی۔

(جاری ہے)

پولیس کے مطابق یہ علاقہ علیحدگی پسند مسلح جنگجوئوں کے زیر اثر ہے جو سنگین جرائم میں ملوث ہیں اور عین ممکن ہے کہ اس واقعے میں بھی یہی گروہ ملوث ہو۔ پولیس نے ایف آئی آر درج کرکے ملزمان کی گرفتاری کے لئے کارروائی کا آغاز کردیا ہے۔۔پولیس نے ایف آئی آر درج کرکے ملزمان کی گرفتاری کے لئے کارروائی کا آغاز کردیا