کابینہ کمیٹی نے آئی جیز اور چیف سیکریٹرٹیز کے تبادلوں پر اظہار تشویش نہیں تفصیلی رپورٹ طلب کی ،ترجمان سینیٹ

کابینہ کمیٹی ریگولیٹری اتھارٹیز کو متعلقہ وزارتوں کے تحت نہیں خودمختار حیثیت میں کام کرنے کی حامی ہے، کمیٹی نے پیمرا کے حوالے سے مفصل رپورٹ طلب کی ہے ،ترجمان سینیٹ کا وضاحتی بیان

ہفتہ جون 12:17

کابینہ کمیٹی نے آئی جیز اور چیف سیکریٹرٹیز کے تبادلوں پر اظہار تشویش ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 جون2018ء) سینیٹ کے ترجمان نے کہا ہے کہ گزشتہ روزسینیٹ کی کابینہ سیکریٹریٹ کمیٹی کے اجلاس کی جاری ہونے والی خبر میں یہ لکھا گیا کہ ریگولیٹری اتھارٹیز کو متعلقہ وزارتوں کے ماتحت ہونا چاہئے اور یہ کہ آئی جیز اور چیف سیکرٹریز کے تبادلوں پر تشویش کا اظہار کیا ۔

(جاری ہے)

واضح رہے کہ کمیٹی نے آئی جیز اور چیف سیکرٹریز کے تبادلوں کی تفصیلی رپورٹ طلب کی ہے جبکہ کمیٹی نے ریگورلیٹری اتھارٹیزکے حوالے سے یہ موقف اختیار کیا تھا کہ سینیٹ نے اس پر واضح نقطہ نظر دیا ہوا ہے اور کمیٹی اس امر کی بھر پور حمایت کرتی ہے کہ ان اداروں کو متعلقہ وزارتوں کے ماتحت نہیں ہونا چاہئے۔

اس ضمن میں اس بات کی تصحیح کی جاتی ہے کہ کمیٹی ریگولیٹری اتھارٹیز کو متعلقہ وزارتوں کے تحت نہیں بلکہ خودمختار حیثیت میں کام کرنے کی حامی ہے تاہم کمیٹی نے پیمرا کے حوالے سے مفصل رپورٹ طلب کی ہے ۔کمیٹی نے اس حوالے سے ڈائرکشن دی ہے کہ ریگولیٹری اتھارٹیز کو متعلقہ وزارتوں کے ماتحت نہیں ہونا چاہئے پیمرا جو وزارت اطلاعات کے ماتحت ہے اسے بھی متعلقہ وزارت سے نکال کر خود مختار کرنے کی سفارش کی ہے۔ جبکہ کمیٹی نے آئی جیز اور چیف سیکریٹرٹیز کے حالیہ تبادلوں پر تشویش کا اظہار نہیں بلکہ تفصیلی رپورٹ طلب کی ہے۔

متعلقہ عنوان :