آپریشن رد الفساد کے تحت جنوبی وزیرستان ایجنسی میں کامیاب آپریشن

کارروائی میں انتہائی مطلوب 6 دہشتگردوں کو موت کے گھاٹ اُتارا گیا۔ آئی ایس پی آر

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین ہفتہ جون 13:56

آپریشن رد الفساد کے تحت جنوبی وزیرستان ایجنسی میں کامیاب آپریشن
راولپنڈی (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 23 جون 2018ء) : آپریشن رد الفساد کے تحت سکیورٹی فورسز کی کامیاب کارروائیاں جاری ہیں۔ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق آپریشن رد الفساد کے تحت جنوبی وزیرستان ایجنسی میں کامیاب آپریشن کیا گیا۔آپریشن لدھیانہ میں خفیہ اطلاعات پر کیا گیا جس میں 6 انتہائی مطلوب دہشتگردوں کو جہنم واصل کر دیا گیا۔ ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق دہشتگردوں کی فائرنگ سے دو سکیورٹی اہلکار بھی شہید ہوئے۔

شہید ہونے والوں میں حوالدار رزاق خان اور حوالدار ممتاز حسین شامل ہیں۔ دہشتگردوں کے خلاف کارروائی میں بھاری مقدار میں گولہ بارود، ہتھیار اور اسلحہ برآمد کیا گیا۔ برآمد کیے جانے والے مواصلاتی نظام سے دہشتگرد افغان حدود میں موجود اپنے ہینڈلرز سے رابطے میں تھے۔

خیال رہے کہ ملک بھر میں پاک فوج نے دہشتگردوں کے خلاف آپریشن رد الفساد جاری کر رکھا ہے ۔

آپریشن رد الفساد کے تحت سکیورٹی فورسز نے اب تک کئی کامیابیاں حاصل کیں اور کئی دہشتگردوں کو جہنم واصل کیا۔یاد رہے کہ 22 فروری 2017ء کو پاک فوج نے پاکستان میں ایک نئے آپریشن ''آپریشن رد الفساد'' (رَدُّالفَسَاد) کا اعلان کیا جو ملک بھر میں شروع کیا گیا۔ اس آپریشن کا مقصد بچے کچے دہشت گردوں کا بلا امتیاز خاتمہ کرنے، چھپے دہشت گردوں کو تلاش کرنے پر مشتمل ہے تاکہ، اب تک کی جانے والی کارروائیوں کے فوائد کو پختہ کیا جائے اور سرحدوں کی حفاظت کو یقینی بنایا جائے۔

پاک فضائیہ، پاک بحریہ، دیوانی مسلح افواج اور دیگر سلامتی / قانون نافذ کرنے والے ادارے اپنی کارروائیاں جاری رکھیں گے / تاکہ ملک سے دہشت گردی کی لعنت کو ختم کیا جا سکے۔آپریشن رد الفساد کے بعد سے ہی ملک کے کئی علاقوں میں امن دیکھنے میں آیا جبکہ عوام نے بھی دہشتگردوں کے خلاف جاری اس آپریشن کو خوب سراہا اور ملک کی مسلح افواج کا شکریہ ادا کیا۔

Your Thoughts and Comments