بھارت میں شہد کی مکھیوں کا بی جے پی وزیر اور کارکنوں پر حملہ

ہفتہ جون 14:44

نئی دہلی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 جون2018ء) بھارتی ریاست چھتیس گڑھ کے دھمتری ضلع کے کرود شہر میں شہدکی مکھیوں نے بھارتیہ جنتا پارٹی کے دفتر میں میٹنگ ہونے سے پہلے ہی پنچایتی امور کے وزیر اجے چندراکر، ان کے محافظ او رتقریباً نصف درجن کارکنوں پر حملہ کرکے انہیں زخمی کردیا۔

(جاری ہے)

سرکاری ذرائع کے مطابق شہدکی مکھیوں کے حملے کے بعد چندراکر میٹنگ کوچھوڑ کر چلے گئے اور کل شام کے دیگر پروگراموں کو بھی منسوخ کردیا۔

رائے پور میں ان کا علاج کیا گیا اور ان کی حالت پہلے سے بہتر بتائی گئی ہے۔ذرائع کے مطابق کل دوپہر بعد بی جے پی دفتر میں میٹنگ منعقد کی گئی تھی۔ میٹنگ شروع ہونے سے قبل پوجا کے لئے اگربتیاں جلائی گئیں جس کے دھویں سے وہاں چھت پر موجود شہد کی مکھیاں پریشان ہوگئیں اور انہوں نے لوگوں پر حملہ کردیا۔

متعلقہ عنوان :