پی ٹی آئی مقبول جماعت ہوتی تو دیرینہ کارکنوں کو نظر انداز کر کے لوٹوں کی کنٹریکٹ پر بھرتی نہ کی جاتی‘ میاں عثمان

ہفتہ جون 15:17

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 جون2018ء) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما ، حلقہ پی پی 153سے امیدوار میاں عثمان نے کہا ہے کہ 25جولائی کو دھرنا سیاست کا ہمیشہ کیلئے دھڑن تختہ ہو جائے گا اور انہیں کہیں منہ چھپانے کی جگہ بھی نہیں ملے گی ، اگر پی ٹی آئی کی عوام میں اتنی ہی مقبولیت ہے تو پھر دیرینہ کارکنوں کو نظر انداز کر کے لوٹوں کی کنٹریکٹ پر بھرتی کیوں کی گئی ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملاقات کے لئے آنے والے نوجوان کارکنوں کے وفد سے ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ میاں عثمان نے کہا کہ تحریک انصاف نے جتنی بھی دھول اڑائی ہے وہ ساری ان کے اپنے چہرے پر پڑی ہوئی ہے اور یہ اسی کے ساتھ انتخابی میدان میں اترنے جارہے ہیں۔ انہوںنے کہا کہ کسی بھی ملک کی ترقی مرحلہ وار عمل ہے اور مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے اس پر گامزن ہو کر اسے ثابت کیا ہے ۔

(جاری ہے)

مسلم لیگ (ن) نے توانائی کے جومنصوبے شروع کئے ہیں ان میں سے کئی ہزار میگا واٹ کے متعدد منصوبے تکمیل کے مراحل میں ہیں اور ان کے مکمل ہونے سے پاکستان توانائی میں خود کفیل ہو جائے گا۔ انہوںنے کہاکہ مسلم لیگ (ن) کے صدر محمد شہباز شریف واضح اعلان کر چکے ہیں کہ آئندہ عام انتخابات میں کامیاب ہونے کے بعد آبی ذخائر کی تعمیر پر توجہ مرکوز کی جائے گیا ور انشا اللہ مسلم لیگ (ن) کے دور میںہی بڑے آبی ذخیرہ کا منصوبہ مکمل ہوگا ۔