یوم انہدام جنت البقیع کے موقع پر دارالحکومت میںزبردست احتجاجی ریلی

علمدار چوک سے آزادی چوک تک ریلی ‘فضاء لبیک یارسول اللہ کے نعروں سے گونج اٹھی ‘ مزارات مقدسہ کو دوبارہ تعمیر کیا جائے حکومت پاکستا ن اثر ورسوخ استعمال کرے‘ اقوام متحدہ‘ او آئی سی مکہ مکرمہ ‘مدینہ منورہ کو کھلا شہر قراردیں‘ مقررین کا خطاب ‘قراردادیں

ہفتہ جون 17:07

مظفرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 جون2018ء) یوم انہدام جنت البقیع کے موقع پر دارالحکومت مظفرآباد میں پر امن احتجاجی ریلی ‘ فضاء لبیک یارسول اللہ کے نعروں سے گونج اٹھی ‘ جنت البقیع ‘ مزارات مقدسہ کو دوبارہ تعمیر کیا جائے ‘ مقررین کا خطاب ‘ قراردادیں بھی پیش کی گئیں۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز 8شوال کو عالمگیر یوم انہدام جنت البقیع کے موقع پر تحریک نفاذ فقہ جعفریہ ‘ مختار فورس اور مختار سٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے زیراہتمام علمدار چوک سے آزادی چوک تک زبردست احتجاجی ریلی نکالی گئی ۔

دربار سائیں سخی سہیلی سرکار کے سامنے آزادی چوک میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا ۔ مظاہرے کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے ارشاد نقوی ‘ فخر کاظمی ‘بلاول کاظمی‘ علی محمود نقوی ‘ محسن کاظمی اور دیگر مقررین نے کہاکہ حکومت پاکستان اپنے اثرو رسوخ کے ذریعے آل سعود کو یہ باور کروائے کہ وہ منہدم کئے گئے مزارات مقدسہ اہل بیت اطہار‘ دختر رسول حضرت فاطمة الزہراؑ ‘ حضرت امام حسن ؑ‘ حضرت امام جعفر صادق ؑ‘حضرت امام زین العابدین ؑ‘ حضرت امام باقر ؑ‘اصحاب رسول ‘ امہات المومنین ؑ کو دوبارہ تعمیر کروائے ۔

(جاری ہے)

اگر ایسا ممکن نہیں تو پھر امت مسلمہ کو اجازت دی جائے وہ خود مقامات مقدسہ کی دوبارہ تعمیر کرسکیں۔انہوں نے اقوام متحدہ اوراو آئی سی سے مطالبہ کیا کہ وہ مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ کو کھلا شہر قراردے تاکہ تمام امت مسلمہ مقامات مقدسہ کی بلا خوف و خطر زیارات کرسکیں۔ اقوام متحدہ اور دیگر عالمی تنظیمیں سعودی حکومت پر سفارتی اور اخلاقی دبائو ڈالیں کہ مقامات مقدسہ کو از سر نو تعمیر کروائے۔

ہم عالمی دہشتگر د تنظیموں کی طرف سے عراق ‘شام ‘لبیا‘ یمن اور دیگر اسلامی ممالک کے اندر کی جانے والی دہشتگرد ی کی پرزور مذمت کرتے ہیں۔ یہ اجتماع مقبوضہ کشمیر اور فلسطین میں ہونیوالی ظلم و بربریت کی پرزور الفاظ میں مذمت کرتا ہے ۔ کشمیر اور فلسطین کے مسلمانوں کے ساتھ بھرپور یکجہتی اور حمایت کا اظہارکرتے ہیں۔مقررین نے کہاکہ مسلح افواج کے دہشتگردی کے حوالے سے کئے جانیوالے تمام اقدامات ‘باالخصوص آپریشن ردالفساد کی بھرپور حمایت کرتے ہیں۔

آپریشن آخری دہشتگرد کے خاتمے تک جاری و ساری رکھا جائے۔ مقررین نے کہاکہ ہم قائد ملت جعفریہ پاکستان آغا السید حامد علی شاہ موسوی کی غیر متزلزل قیادت پر بھرپور اعتماد کا اظہار کرتے ہیں۔ ان کے ہر حکم پر لبیک کہیں گے۔ مظاہرے میں پیش کی جانیوالی قراردادوں کو نعرہ تکبیر لگا کر منظور کیا گیا۔ مقررین نے کہاکہ شعائراللہ کی حفاظت امت مسلمہ کی ذمہ داری ہے امت اس ذمہ داری کو پورا کرے۔