کراچی ،بلدیہ وسطی میں برساتی نالوںکی خصوصی صفائی مہم کا آغاز

ایک ہفتہ دن رات صفائی مہم کے دوران 35/کلومیٹر طویل برساتی نالوں کو صاف کیا جائے گا

ہفتہ جون 18:06

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 جون2018ء) بلدیہ وسطی کے چیئرمین ریحان ہاشمی نے برساتی نالوںکی خصوصی صفائی مہم کا آغاز کردیا۔ افرادی قوت کے ساتھ ہیوی مشینری کا استعمال ۔ صفائی مہم کا مقصد مون سون برسات کے موقع پر عوام کو ناگہانی صورتِ حال سے دوچار ہونے سے بچانا ہے۔مذکورہ صفائی مہم ۲۲,اور ۳۲/ جون کی درمیانی شب شروع کی گئی ۔اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ریحان ہاشمی نے بتایا کہ اس خصوصی صٖفائی مہم کا بنیادی مقصد برساتی نالوں کی صفائی ہے تاکہ بارشوںکے دوران یہ نالے اوور فلو نہ ہوجائیں اور گھروں میں بارش اور سیوریج کا پانی نہ بھر جائے۔

انہوں نے بتایا کہ اس مہم کے دوران ۰۷/چوکڈ پوائنٹس اور ۵۳/کلو میٹر طویل براستی نالوںکی صفائی کے لئے افرادی قوت کے ساتھ ۸۳/ہیوی مشنریز استعمال کی جائیں گی جن میں ۸۱/ڈمپر لوڈرز اور ۴/ایکسکیو یٹرز شامل ہیں۔

(جاری ہے)

یوں تو صفائی کا مسئلہ پورے کراچی میں ایک عفریت کی شکل اختیارکرچکا ہے اور اس پریشان کُن صورتِ حال کی ذمہ دار حکومتِ سندھ ہے جس نے کراچی کی منتخب قیادت اور مقامی حکومت کو نہ صرف اختیارات سے محروم کردیا ہے بلکہ مالی معاملات میںبھی پریشانیاں پیداکی ہیں۔

تقریباً آٹھ برسوں تک بلدیاتی انتخابات کا نہ ہونا نہ صرف کراچی بلکہ پورے صوبہٴ سندھ کے عوام کے لئے ذہنی کوفت کا باعث تھا جبکہ حکومتِ سندھ اور اُس کے منظورِ نظر افراد اپنے اختیارات سے بھرپور ذاتی مفاد حاصل کرتے رہے اور عوام کی تکالیف کو نظر اندازکیا گیا۔ خدا خداکرکے سپریم کورٹ کے حکم پر بلدیاتی انتخابات ہوئے اور کراچی کے بلدیاتی ادارے عوام کی جانب سے منتخب نمائندوں کی ذمہ داری بنے۔

بلدیہ وسطی جو کہ آبادی کے لحاظ سے سب سے بڑاضلع ہے، اس میںبھی ایسے ہی حالات میں منتخب نمائندے ریحان ہاشمی نے چیئرمین کا منصب سنبھالا۔ تاہم کوڑے کرکٹ کا انبار ایک عذاب کی شکل میں سامنے موجود تھا۔ تاہم عوام کا درد رکھنے والے عوامی نمائندوں نے اس چیلنج کو قبول کیا اور دن رات کی محنت وہ نتیجہ لائی کہ آٹھ سال کا بیک لاگ بمع روزآنہ کی بنیاد پر جمع ہونے والا کوڑاکرکٹ بھی صاف کیا جانے لگا۔

دوسری جانب برساتی اور سیوریج کے پانی کی نکاسی کے لئے بنائے گئے نالوں کی صفائی بھی ایک مسئلہ تھی۔ عوام کی جانب سے غیر مناسب رویہ نے نالوں کو کچراکونڈی کی شکل دے دی۔ تاہم یہ چیلنج بھی ریحان ہاشمی نے قبول کیا اور نالوںکی صفائی کی مہم بھی جاری رہی ۔ فی الوقت سب سے اہم بات مون سون بارشوں کے موقع پر عوام کو پریشان کُن صورتِ حال سے بچانے کے لئے برساتی نالوں کی صفائی ہنگامی بنیادوں پر کرانا ضروری تھا ۔

یوں ریحان ہاشمی نے بلدیہ وسطی کی حدود میں رین ایمرجنسی نافذ کردی ہے اورافرادی قوت کے ساتھ ہیوی مشینری کا استعمال ضروری سمجھا اور ۲۲, اور ۳۲/ جون کی درمیانی شب گلبرک کے نزدیک پیالہ ہوٹل کے ساتھ واقع برساتی نالے کی صفائی سے ابتداکی گئی۔ یہ مہم چوبیس گھنٹے ایک ہفتے تک جاری رہے گی ، اس دوران ۵۳/کلومیٹر طوالت کے برساتی نالوں کو کوڑے کرکٹ سے صاف کرکے گندے اور بارش کے بانی کی سہل نکاسی ممکن بنائی جائے گی۔