کشمیریوں کے جذبہ حریت کو دبانے کیلئے بھارتی فوج ظالمانہ اور تشدد آمیز حربے استعمال کر رہی ہے‘مشاہد حسین سید

بین الاقوامی برادری کشمیر پر دوہرے معیار ترک کرے اورکشمیریوں کے خلاف ریاستی جبر روکنے کیلئے ٹھوس اقدامات کئے جائیں

ہفتہ جون 20:20

کشمیریوں کے جذبہ حریت کو دبانے کیلئے بھارتی فوج ظالمانہ اور تشدد آمیز ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 جون2018ء) سینیٹ کی خارجہ امور کمیٹی کے چیئرمین اور پاکستان مسلم لیگ ن کی مرکزی میڈیا کمیٹی کے سربراہ سینیٹر مشاہد حسین سید نے مقبوضہ کشمیر میں کشمیری عوام کے خلاف بھارتی مظالم اورشہداء کے جنازوں پر تشدد سے قیمتی جانوں کے ضیاع کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ مسلم لیگ (ن )یہ مسئلہ سینیٹ میں اجاگر کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ کشمیریوں کے جذبہ حریت کو دبانے اور حق خود ارادیت کو روکنے کے لیے بھارتی فوج ظالمانہ اور تشدد آمیز حربے استعمال کر رہی ہے۔

کشمیریوں کی نسل کشی کی جا رہی ہے۔ مقبوضہ وادی میں انٹرنیٹ اور موبائل سروس کی بندش کے علاوہ مظلوم کشمیری عوام کو نمازِ جمعہ اور شہداء کے جنازوں میں شرکت کرنے سے بھی روکا جاتا ہے۔ سینیٹر مشاہد حسین سید نے بی جے پی رہنماء کے اس بیان کی بھی پرزور مذمت کی ہے جس میں اس نے کہا تھا کہ سچائی منظر عام پر لانے والے صحافیوں کا انجام بھی شجاعت بخاری جیسا ہوگا۔

(جاری ہے)

دوسرے الفاظ میں بھارتی حکمران جماعت کھلے عام یہ کہہ رہی کہ شجاعت بخاری کی طرح اپنے فرائض ایمانداری سے ادا کرنے والے صحافیوں کو بھی قتل کردیا جائے گا۔ مشاہد حسین سید نے کہا کہ مسلم لیگ (ن )اس سنگین مسئلے کو سینیٹ کے آئندہ اجلاس میں اٹھائے گی ۔ انہوں نے بین الاقوامی برادری سے اپیل کی کے کشمیر پر دوہرے معیار ترک کرے اورکشمیریوں کے خلاف ریاستی جبر روکنے کے لیے ٹھوس اقدامات کئے جائیں۔