میں کسی ٹکٹ کا نہیں اللہ اور عوام کا محتاج ہوں،25 جولائی کو مخالفین کی ضمانتیں ضبط کرا دوںگا،چودھری نثار علی خان

مشرف دور میں (ق) لیگ کا ایم پی اے رہنے والا آج نواز شریف سے وفاداری دکھا رہا ہے، یہ قیامت کی نشانیاں ہیںان لوگوںکی مثال ایسی ہے جیسے چور پولیس کی تعریف کررہا ہو، چک بیلی میں انتخابی ریلی سے خطاب

ہفتہ جون 21:56

میں کسی ٹکٹ کا نہیں اللہ اور عوام کا محتاج ہوں،25 جولائی کو مخالفین کی ..
راولپنڈی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 جون2018ء) مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنماء اور سابق وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان نے کہا ہے کہ میں کسی ٹکٹ کا نہیں اوپر اللہ اور نیچے عوام کا محتاج ہوں،25 جولائی کو ہونیوالے عام انتخابات میں مخالفین کی ضمانتیں ضبط کرا دوںگا، مشرف دور میں (ق) لیگ کا ایم پی اے رہنے والا آج نواز شریف سے وفاداری دکھا رہا ہے، یہ قیامت کی نشانیاں ہیںان لوگوںکی مثال ایسی ہے جیسے چور پولیس کی تعریف کررہا ہو۔

ہفتہ کو راولپنڈی کے علاقے چک بیلی میں انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنماء اور سابق وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہ میں کسی ٹکٹ کا محتاج نہیں ہوں ،25 جولائی کو ہونے والے عام انتخابات میں مخالفین کی ضمانتیں ضبط ہوں گی۔

انہوں نے کہا کہ آستین چڑھا کر تو ہر کوئی تقریر کر سکتا ہے لیکن میں نے حلقے کی گلی گلی میں کام کروایا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سیاسی مسافر عوام سے ووٹ مانگنے آئیں گے، آپ کے پاس ایک شخص ٹیکسلا سے ووٹ لینے آئے گا، اس شخص کی ایم اے، بی اے کی ڈگری جعلی ہے اور وہ میٹرک بھی فیل ہے۔انہوں نے کہا کہ اس شخص کی پہچان یہ ہے کہ وہ میرا مخالف ہے، اس لئے پیپلزپارٹی اور مشرف نے اسے وزیر بنایا، میری مخالفت کی وجہ سے ہی عمران خان نے اسے ٹکٹ دیا۔انہوں نے کہا کہ میں کسی ٹکٹ کا نہیں بلکہ اوپر اللہ اور نیچے عوام کا محتاج ہوں۔

انہوں نے کہا کہ اس حلقے پر ساری دنیا کی نظریں ہوں گی۔ انہوں نے مخالفین کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آؤ اپنا امیدوار لاؤ مگر مجھے شکست نہیں دے سکتے۔انہوں نے کہا کہ پہلے عوام نے مجھے ایک لاکھ 38 ہزار ووٹوں نے جتوایا تھا اور اس بار ایک لاکھ 72 ہزار ووٹوں سے جتوائیں گے، اس دفعہ کوئی شک نہیں کہ یہاں سے ریکارڈ کامیابی حاصل ہو گی۔انہوں نے کہا کہ جب سابق وزیراعظم محمد نواز شریف کو ہتھکڑیاں لگائی گئیں اور جیل بھیجا گیا اور پھر سعودی عرب جلا وطن کر دیا گیا، اس وقت مسلم لیگ (ن) نے اس وقت صرف 13 نشستیں جیتیں اور ان میں میری نشست بھی شامل تھی۔

انہوں نے کہا کہ میرا مخالف شخص 8 سال مشرف کی وردی کے پیچھے چھپتا رہا، یہ ہی میرا مخالف پیپلزپارٹی میں بھی رہا ہے، جو شخص مشرف دور میں (ق )لیگ کا ایم پی اے رہا، آج نوازشریف سے وفاداری دکھا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ قیامت کی نشانیاں ہیں کہ پرویز مشرف کے حمایتی آج نواز شریف سے وفاداری کے معیار قائم کر رہے ہیں لیکن ان لوگوں کی مثال ایسی ہے جیسے چور پولیس کی تعریف کر رہا ہو۔

Your Thoughts and Comments