ممبئی میں ڈسپوزیبل برتن اور پلاسٹک بیگ کے استعمال پر پابندی،خلاف ورزی پر جرمانہ

پلاسٹک سے بنی چند مصنوعات کے استعمال کی مشروط اجازت،فیصلے سے پلاسٹک کی صنعت کو نقصان پہنچے گا،ناقدین

اتوار جون 13:50

ممبئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 جون2018ء) بھارت کی ریاست مہاراشٹر کے شہر ممبئی میں حکام نے آلودگی کو کم کرنے کے لیے پلاسٹگ بیگ، ڈسپوزیبل برتنوں سمیت پلاسٹک کی دیگر مصنوعات پر پابندی عائد کر دی ۔۔بھارتی ٹی وی کے مطابق حکام کا کہنا تھا کہ اس پابندی کا اطلاق فوری طورپر نافذ العمل ہو گا اور پابندی کی خلاف ورزی کرنے والوں کو زیادہ سے زیادہ 25 ہزار روپے جرمانہ اور تین ماہ کی قید ہو سکتی ہے۔

(جاری ہے)

جن پلاسٹک مصنوعات کے استعمال پر پابندی عائد کی گئی ہے اٴْن میں پلاسٹک سے بنے شاپنگ بیگ، ایک مرتبہ استعمال ہونے والے پلاسٹک کے برتن، چمچے، کانٹے وغیرہ شامل ہیں۔ریاستی حکومت کی جانب سے عائد کی گئی پابندی سے ریستوران کے کاروبار پر کافی اثر پڑے گا کیونکہ پلاسٹک اور تھرموفول سے بنے برتن سستے ہوتے ہیں۔حکومت نے پلاسٹک سے بنی چند مصنوعات کے استعمال کی اجازت دی ہے لیکن ان کو دوبارہ قابلِ استعمال بنانے کے لیے سرچارج عائد کیا گیا ہے۔اگرچہ انڈیا کی باقی ریاستوں میں بھی پلاسٹک کے استعمال کو روکنے کے لیے کچھ پابندیاں ہیں لیکن مہاراشٹر پہلی ریاست جس نے ماحولیاتی تحفظ کے لیے پلاسٹک کے استعمال پر اتنے بڑے پیمانے پر پابندی عائد کی ہے۔