سال قبل انتقال کر جانے والا حاجی ذاکر الیکشن لڑے گا

حاجی ذاکر نی120 گز کا پلاٹ جعلی دستاویزات پر فروخت کیا تھا ،ْ میڈیا رپورٹ

اتوار جون 13:50

ٹھٹھہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 جون2018ء) عام انتخابات 2018 میں حصہ لینے کیلئی8 سال قبل انتقال کر جانے والا شخص حاجی ذاکر حسین کلاتری دوبارہ زندہ ہوگیا۔میڈیا رپورٹ کے مطابق حاجی ذاکر نی120 گز کا پلاٹ جعلی دستاویزات پر فروخت کیا تھا۔ وہ کراچی کے تھانہ نارتھ ناظم آباد میں درج فراڈ کے مقدمے میں ملوث تھا۔ جس سے جان چھڑانے کے لیے اس نے اثر و رسوخ استعمال کر کے ضلع ٹھٹھہ کی تحصیل میرپور بٹھورو کی یونین کونسل دریا خان سوہو سے فوتی سرٹیفکیٹ جاری کرایا جس کی بنیاد پراس کی مقدمے سے جان چھوٹی۔

(جاری ہے)

میڈیا نے حاجی ذاکرحسین کلاتری کے انتقال کے حوالے سے جاری سرٹیفکیٹ کی کاپی بھی حاصل کر لی جس میں واضح طور پر انتقال کر جانے والے کے کالم میں حاجی ذاکرحسین کلاتری کا نام اور شناختی کارڈ نمبر دیکھا گیاسرٹیفکیٹ میں اس کے انتقال کی تصدیق کرنے والے دو گواہان کے نام بھی تحریر ہیں۔ مخالف امیدواروں نے کہا کہ حاجی ذاکر حسین کی نا اہلی کے لیے عدالت سے رجوع کر رہے ہیں۔ حاجی ذاکر عام انتخابات میں ٹھٹھہ کے ساحلی علاقے گھوڑا باری کے علاقوں پر مشتمل پی ایس 78سے آزاد امیدوار بھی ہے۔