سالوں گزرنے کے باوجود بھی متاثرین منگلا ڈیم کے مسائل حل نہ ہو سکے‘ متاثرین انصاف کے منتظر

اتوار جون 15:40

اسلام گڑھ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 جون2018ء) سالوں گزرنے کے باوجود بھی متاثرین منگلا ڈیم کے مسائل حل نہ ہو سکے۔اضافی کنبہ جات،معاوضوں کی ادائیگی سمیت کمرشل پلاٹوں اور دوکانوں کی آلاٹمنٹ سمیت دیگر مسائل جوں کے توں پڑے ہیں۔نیوٹائون اسلام گڑھ میں بنائے گے سکول کالجز،کمیونٹی ہال ودیگر محکموں کی عمارتیں بھوت بنگلے کا روپ دھانے لگی ہیں۔

متاثرین منگلا ڈیم کو فوری طور پر مسائل حل کرنے کا مطالبہ ۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق منگلا ڈیم کی اپ ریزنگ مکمل ہونے کے بعد ابھی متاثرین منگلا ڈیم مسائل کی دلدل میں پھنسے ہوئے ہیں۔اضافی کنبہ جات متاثرین منگلا ڈیم کا دیرینہ مطالبہ تھا جو آج تک حل نہیں ہو سکا ہے۔دوسری جانب نیوٹائون اسلام گڑھ میں تعمیر کی گئی سرکاری عمارتیں استعمال نہ ہونے کی وجہ سے تباہی کے دہانے پر پہنچ گئی ہیں۔نیوٹائون میں کمرشل پلاٹوں اور دوکانوں کی آلاٹ منٹ بھی ایک معمہ بنا ہوا ہے۔متاثرین منگلا ڈیم نے حکومت اور وزیر ایم ڈی ایچ اے سے فوری مطالبہ کیا ہے کہ متاثرین منگلا ڈیم کے مسائل حل کرنے میں سنجیدگی کا مظاہرہ کیا جائے تاکہ متاثرین منگلا ڈیم کے مسائل سکھ کا سانس لے سکیں۔

متعلقہ عنوان :