ایف بی آر نے ایمنسٹی سکیم کو کامیاب بنانے کیلئے ایمرجنسی نافذ کر دی

خفیہ سرمایہ کو قانونی شکل دینے کیلئے ایف بی آر کا خصوصی سیل چوبیس گھنٹے متحرک رہے گا

اتوار جون 15:50

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 جون2018ء) ایف بی آر نے ایمنسٹی سکیم کو کامیاب بنانے کیلئے ایمرجنسی نافذ کر دی، خفیہ سرمایہ کو قانونی شکل دینے کیلئے ایف بی آر کا خصوصی سیل چوبیس گھنٹے متحرک رہے گا۔ایف بی آر ایمنسٹی سکیم کو کامیاب بنانے کیلئیسر توڑ کوششیں کرنے لگا۔ ایف بی آر آئی ٹی ونگ کے خصوصی سیل نے ایمنسٹی سکیم کیلئے ایمرجنسی نافذ کردی ہے۔

ایمنسٹی سکیم کیلئے ممبر آئی ٹی خواجہ عدنان ظہیر نے خصوصی الرٹ جاری کر کے ٹیکس گزاروں کی چوبیس گھنٹے رہنمائی کیلئے اپنے سپیشل اسسٹنٹ اکبر علی میو کے موبائل نمبرز جاری کر دیئے ہیں۔ ایف بی آر کا خصوصی ونگ ایمنسٹی سکیم کیلئے 19 جون سی24 گھنٹے کام کر رہا ہے ایف بی آر حکام کے مطابق اپنے سرمائے کو قانونی شکل دینے کیلئے بیرون ملک مقیم پاکستانی روزانہ کی بنیاد پر سینکڑوں فون کالز کر رہے ہیں۔

(جاری ہے)

ایف بی آر نے ایمنسٹی سکیم کے ذریعے ایک سو ارب روپے اکٹھے کرنے کا ہدف مقرر کر رکھا ہے۔ ٹیکس ایمنسٹی سکیم سے سیاستدان، سرکاری افسران و ملازمین اور انکے اہل و عیال مستفید ہونے کے ا ہل نہیں ہیں ٹیکس ایمنسٹی سکیم کے تحت اندرون ملک اثاثے چھپانے اور ٹیکس چوری کرنے والے صرف پانچ فیصد ٹیکس دے کے تمام دولت کو قانونی بنا سکتے ہیں۔ یہ شرح ٹیکس کی موجودہ شرح سے 86 فیصد تک کم ہے جبکہ اس وقت، ٹیکس کی موجودہ شرح 7 سے 35 فیصد تک ہے۔

متعلقہ عنوان :