پاکستان اور سعودی عرب کا دو طرفہ تعلقات کو مزید مضبوط بنانے کیلئے ذرائع ابلاغ اور ثقافت کے شعبوں میں تعاون بڑھانے کے طریقوں پر تبادلہ خیال

پاکستان یمن میں بحران کے خاتمے اور متحارب دھڑوں کے درمیان مذاکرات کا جلد آغاز چاہتا ہے ،ْ ایڈیشنل سیکرٹری شفقت جلیل کی گفتگو

اتوار جون 16:50

جدہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 جون2018ء) پاکستان اور سعودی عرب نے دو طرفہ تعلقات کو مزید مضبوط بنانے کے لئے ذرائع ابلاغ اور ثقافت کے شعبوں میں تعاون بڑھانے کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا ہے۔ یہ تبادلہ خیال جدہ میں ایڈیشنل سیکرٹری اطلاعات شفقت جلیل اور سعودی عرب کے وزیر ثقافت و اطلاعات ڈاکٹر عوادبن صلاح العواد کے درمیان ایک ملاقات میں کیا گیا۔

ملاقات میں طرفین نے برادر ملکوں کے عوام کو مزید قریب لانے کیلیے ذرائع ابلاغ اور ثقافت کے شعبوں میں تعاون میں گہری دلچسپی کا اظہارکیا۔ایڈیشنل سیکرٹری اطلاعات شفقت جلیل نے جدہ میں یمن میں قانونی حکومت کے حامی اتحادی ملکوں کے وزرائے اطلاعات کی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان یمن میں بحران کے خاتمے اور متحارب دھڑوں کے درمیان مذاکرات کا جلد آغاز چاہتا ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہاکہ پاکستان صدر عبدربومنصور ہادی کی قانونی حکومت کی غیر مشروط بحالی اور دارالحکومت صنعا سمیت زیر قبضہ علاقوں سے باغی فورسز کے انخلا کا مطالبہ کرتا ہے۔ موجودہ انسانی بحران یمن کیعوام کی مشکلات میں کمی کیلئے عالمی سطح پر مزید ٹھوس اور مربوط کوششوں کا متقاضی ہے۔ کانفرنس میں سعودی عرب،، متحدہ عرب امارات ،سوڈان، مصر،، کویت، بحرین، اردن، جبوتی، ملائیشیا، سینیگال، یمن اور پاکستان کے وزرائے اطلاعات نے شرکت کی۔