پنجاب بھر میں یکم جولائی سے گاڑیوں کی ٹرانسفرکے نئے طریقہ کارکا نفاذ

ٹرانسفر ڈیڈ کے ذریعے گاڑیوں کی ملکیت کی منتقلی کی مہلت 30جون کے بعد ازخود غیر موثر ہو جائے گی

اتوار جون 19:20

راولپنڈی 24مئی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 جون2018ء) پنجاب بھر میں ٹرانسفر ڈیڈ کی بنیاد پر گاڑیوں کی منتقلی کی مہلت 30جون کو ختم ہوجائے گی جس کے بعد گاڑیوں کی ٹرانسفرکا نیا طریقہ کار نافذ ہو جائے گا اور فروخت کنندہ اور خریدار کی بائیو میٹرک تصدیق کے بغیر گاڑی ٹرانسفر ممکن نہیں ہو سکے گی ۔محکمہ ایکسائز ،ٹیکسیشن و نارکوٹکس کنٹرول پنجاب کے ذرائع نے اے پی پی کو بتایاکہ گاڑیوں کی ملکیت کے عمل میں جعلسازی اور التواء کے روک تھام کے اقدامات کے تسلسل میں پنجاب حکومت کی جانب سے یکم جولائی 2018سے گاڑی ٹرانسفر کروانے کے لیے فروخت کنندہ اور خریدار کی ازخود ای ٹی اوکے سامنے پیش ہو کر موقع پر بائیومیٹرک تصدیق کو لازم قرار دیا گیا ہے ۔

محکمہ ایکسائز پنجاب نے شہریوں کو خبردار کیاہے کہ 30 جو ن کے بعد ٹرانسفر ڈیڈ کی بنیاد پر گاڑیوں کی ملکیت کی منتقلی کا پرانا طریقہ کار ختم کر دیا جائے گا ۔

(جاری ہے)

اس حوالے سے ڈائریکٹر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن راولپنڈی نے قومی خبر ایجنسی کو بتایاکہ مروجہ طریقہ کار کے تحت ٹرانسفر ڈیڈ کے ذریعے گاڑیوں کی ملکیت کی منتقلی صرف 30 جون تک ہو سکے گی اور اس ضمن میں شہریوں کو ہدایت کی جاتی ہے کہ وہ اس سہولت سے بروقت استفادہ کریں بصورت دیگر یکم جولائی سے نئے طریقہ کار کے تحت منتقلی کا عمل ضروری کر دیا جائے گا اور نئے نظام کے اطلاق کے بعد پرانا نظام یکسر متروک تصور کیا جائے گا ۔

متعلقہ عنوان :